بھارت کی فوجی صلاحیت خطر ناک حد تک بد تر قرار

فائل فوٹو

فائل فوٹو

نئی دہلی:بھارتی عوام کی اکثریت کا کہنا ہے کہ ان کے ملک کی فوجی صلاحیت خطرناک حد تک بدتر اور خطرے کے نشان کو چھو رہی ہے، ہتھیاروں کی حالت خراب ہے، کیونکہ ان کی مینٹی نینس نہیں کی جاتی۔

تفصیلات کے مطابق جریدے اکنامسٹ نے بھارتی فوج کی حربی صلاحیت و ہتھیاروں کی حالت زار کا پول کھول دیا۔

خود بھارتی بھی اپنی افواج کی صورتحال سے پریشان اور خوفزدہ ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ 2000 لڑاکا طیاروں میں سے 40 فیصد خراب پڑے ہیں اور کسی کام کے نہیں رہے۔

بھارتی فورسز اعدادوشمار کے لحاظ سے 2010 کے بعد سے اسلحہ کا سب سے بڑا خریدار ہے،روسی جنگی جہاز، اسرائیلی میزائل، امریکی ٹرانسپورٹ طیارے، فرانسیسی آبدوزیں اور دیگر ہتھیاروں سے بھارتی افواج مسلح ہیں۔

بھارتی تعمیراتی سستی کا یہ عالم ہے کہ جس ائیرکرافٹ کیرئیر کو 2010 میں تیار ہوجانا چاہیے تھا وہ 2023 سے پہلے پانی میں نہیں اتر سکے گا۔

ملٹری افئیرز کے ماہر اجے شکلا کا کہنا ہے کہ بھارتی ائیرفورس کو آج سے جدید بنانا شروع کیا جائے تو اسے 10 برس لگیں گے۔

بھارتی فورسز کاغذ پر بہت مضبوط نظر آتی ہے، چین کے بعد دنیا کی دوسری سب سے بڑی جنگی مشین ہے لیکن غیرذمہ دارانہ رویے کا شاہکار نظر آتی ہے۔

loading...
loading...