مقبوضہ کشمیر خصوصی حیثیت، بھارتی صدر کا حکم نامہ سپریم کورٹ میں چیلنج

mar

جموں و کشمیر نیشنل کانفرنس نے آرٹیکل 370 کے متعلق صدارتی حکم کےخلاف بھارتی سپریم کورٹ سے رجوع کرلیا۔

اکتوبر 1949کو منظور ہونے والے بھارتی آئین کے آرٹیکل 370 نے جموں اور کشمیر کو خصوصی حیثیت دی تھی جس کے تحت مقبوضہ وادی کو یہ اختیار تھا کہ اس کا اپنا آئین رکھے اور محدود قانون سازی کرسکے۔

بھارتی حکومت کے فیصلے کے خلاف درخواست نیشنل کانفرنس کے رہنما محمد اکبر لون اور حسنین مسعودی نے دائر کی۔ پارٹی رہنما اور جموں اور کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ کونظربند کرنے کے ایک دن بعد پیر کو گرفتار کرلیاگیا تھا۔

سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی اور معتدد سیاسی رہنما بھی زیر حراست ہیں جبکہ پرتشدد واقعات کی روک تھام کےلئے لاکھوں فوجی مقبوضہ وادی میں موجود ہیں۔

ذرائع کے مطابق سرینگر میں جمعے کی نماز کے بعد ہزاروں افراد نے مرکز کے فیصلے کےخلاف شدید احتجاج کیا۔ سیکیورٹی فورسز نے مظاہری پر آنسو گیس کی شیلنگ اور ہوائی فائرنگ کی۔

جمعے کے مظاہروں میں متعدد افراد کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔ جبکہ بھارتی حکومت صورتحال قابو میں ہونے کا ڈھونگ رچارہی ہے۔

loading...
loading...