سفارتخانہ منتقلی کے متعلق صدر ٹرمپ کا اعلان کسی بھی وقت متوقع

فائل فوٹو

فائل فوٹو

اسرائیل میں اپنا سفارتخانہ تل ابیب سے مقبوضہ بیت المقدس منتقل کرنے کے فیصلے کے متعلق  صدر ڈونلڈ ٹرمپ آج کسی وقت بھی اعلان کرسکتے ہیں۔

امریکی سفارتخانے کی تل ابیب سے مقبوضہ بیت المقدس متوقع منتقلیپوری دنیا سے سخت ردعمل سامنے آیا ہے۔

فلسطینی عیسائیوں نے امریکی صدر کے اعلان پر احتجاج کیااور بیت اللحم میں ڈونلڈ ٹرمپ کی تصاویر جلا دی گئیں۔

 پوپ فرانسس نے بھی امریکی فیصلے پر تشویش کا اظہار کیا۔

فلسطینی صدر محمود عباس بھی ٹرمپ کو فیصلے کے سنگین نتائج سے آگاہ کر چکے ہیں۔

ترکی کا کہنا ہے کہ اگر سفارتخانہ مقبوضہ بیت المقدس منتقل کیا گیا تو اسرائیل سے تعلقات منقطع کردیے جائیں گے۔

یورپی یونین نے بھی صورتحال پر تشویش ظاہر کی ہے۔