امریکا نے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرلیا

فائل فوٹو

فائل فوٹو

واشنگٹن: امریکا نے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرلیا ہے۔

امریکی  صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ امریکا دوریاستی حل کی حمایت کرتا ہے۔تنازعہ کا حل  دونوں  فریقین نے خود کرنا ہے۔اسرائیل اور فلسطین کے لوگوں کیلئے یہ لمحہ اہم ہے۔

امریکی صدرنے کہا کہ اسرائیل تین مذاہب کا گڑھ ہی نہیں ہے۔یروشلم میں تینوں مذاہب کے لوگ عبادت کرنے کیلئے آزاد ہیں۔

صدر ٹرمپ نےکہا کہ 2 دہائیوں میں  ہم اسرائیل ، فلسطین تنازعے کے حل کے قریب تر آئے۔پچھلے صدور اس معاملے کو حل کرنے میں ناکام رہے۔

ڈونلڈ ٹرمپ کا مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کیے جانے کے فیصلے کے متعلق کہنا تھا کہ اس فیصلے کو کئی اختلافات کا سامنا رہا۔

امریکی صدر نے تل ابیب میں موجود سفارتخانے کو بھی مقبوضہ بیت المقدس منتقل کرنے کا باقاعدہ حکم دے دیا۔

jer