وہ 5 الفاظ جو ہمیں استعمال کرنا چھوڑنے ہونگے

dont

ہم سب جانتے ہیں جوباتیں ہیں دوسروں سے کرتے ہیں وہ معنی رکھتی ہیں۔ لیکن بعض اوقات ہم یہ بھول جاتے ہیں کہ اپنے متعلق استعمال کیے جانے والے الفاظ بھی اتنے ہی اہم ہوتے ہیں۔ ہمیں اپنے متعلق الفاظ استعمال کرتے ہوئے احتیاط برتنی چاہیئے۔

ہم اپ کو بتاتے ہیں 5 ایسے الفاظ جو ہمیں اپنے متعلق استعمال کرنے چھڑنا ہوں گے۔

کاہل

ہم میں سے کئی لوگ کہتے ہیں کہ ہم ورزش کیلئے، گھر یا دفتر کے کسی کام کیلئے صبح جلدی نہیں اٹھ سکتے۔ ماہرین کے مطابق ہمیں اپنے متعلق ایسا سوچنے کے بجائے یہ دیکھنا چاہیئے کہ کہیں ہمیں مزید آرام، نیند، حوصلہ افزائی یا معلومات کی ضڑورت تو نہیں۔ ہمیں اپنی تھکاوٹ کو کاہلی سے ملا نہیں دینا چاہیئے۔

صرف

اگر آپ سے پوچھا جائے کہ آپ زندگی گزارنے کیلئے کیا کرتے ہیں یا زندگی کا کوئی اور عمل کس طرح انجام دیتے ہیں تو جواب میں ‘صرف’ کے استعمال سے گریز کریں۔ آپ ‘صرف’ ایک طالبعلم یا ‘صرف’ اسسٹنٹ نہیں۔ آپ جو ہیں اور جو کچھ کرتے ہیں اُسے اپنائیں۔ اس طرح کے الفاظ ظاہر کرتے ہیں کہ آپ کو ان چیزوں پر ندامت ہے۔

معذرت

ہم یہ لفظ ضرورت سے زیادہ استعمال کرتے ہیں۔ بظاہر تو ایسا لگتا ہے کہ یہ لفظ بےضرر ہے لیکن ایسا ہے نہیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ ہمیں معذرت کے لفظ کو شکریہ کے لفظ سے بدل لینا چاہیئے۔ جیسے کہ ‘معذرت مجھے دیر ہوگئی’ کے بجائے ‘انتظار کرنے کا شکریہ’ کہنے کی عادت ڈالیں۔

حساس

اپنے خیالات اور احساسات کو حساس قرار دینے سے آپ نہ صرف اپنے آپ کو پرکھ رہے ہوتے ہیں بلکہ خیالات و احساسات کی نفی کررہےہوتے ہیں۔ جذبات رکھنے میں کوئی غلط بات نہیں۔ اگر آپ میں عام آدمی کی نسبت زیادہ احساسات ہیں تو کسی کو اپنے رویے کی صفائی دینے کی کوئی ضرورت نہیں۔

ناامید

چاہے آپ کتنا ہی پست محسوس کررہے ہوں لیکن کبھی اپنے لیے ناامیدی کا لفظ استعمال نہیں کریں۔

Business Insider بشکریہ

loading...
loading...