جان لیوا بیماریاں جن میں مرد زیادہ مبتلا ہوتے ہیں

health-wellness_body-mind-spirit_heart_can-anger-cause-a-heart-attack_49392570-1024x768

پانچ جان لیوا بیماریاں جو خواتین کے مقابلے میں مردوں کو زیادہ ہوتی ہیں ۔

تندرستی ہزار نعمت ہے  ایک مشہور مصرہ  ہے اور اس بات میں کوئی شک   نہیں کہ  صحت سے بڑھ کر کوئی  چیز نہیں، صحت مند  زندگی گزارنے کے لئے  بہت سے چیزوں کا خیال رکھنا پڑتا ہے  اگر صحت کا خیال نہ رکھا جائے تو  بہت سی بیماریا ں  ہوسکتی ہیں اور ایک تحقیق سے اس بات کا علم ہوا ہے کہ خواتین کے مقابلے میں مرد  زیادہ بیمار ہوتے ہیں ،

ذیل میں پانچ ایسی جان لیوہ بیماریاں ہیں  جو خواتین کے مقابلے میں مردوں کو زیادہ ہوتی ہیں ۔

دل کی بیماری

یہ بات بالکل سچ ہے کہ مرد ہو یہ خواتین دونوں کو ہی دل کی بیماری ہوتی ہے مگر موٹاپے کی وجہ سے مردوں کو دل کی بیماریاں زیادہ ہوتی ہیں ، ایم ایس این میں شائع  ایک رپورٹ   کے مطابق مرد دل کی بیماری سے  اس لئے زیادہ متاثر ہوتے ہیں کیونکہ مرد  خواتین سے زیادہ شراب اور لال گوشت کا استعمال کرتے ہیں ۔

پھیپھڑوں کا کینسر

عام طور پر مردوں کو  ان کی زندگی میں  کینسر کا زیادہ خطرہ ہوتا ہے  سی این این  نے اپنی رپورٹ میں بتایا ہےکہ خواتین کے مقابلے میں مرد پھیپھڑوں کا کینسرسے ڈھائی گنا زیادہ   زیادہ مرتے ہیں جس کی وجہ ان کے رہنے کا طریقہ   ، سگریٹ نوشی ، شراب نوشی اور مرض کے معلوم ہونے کے بعد اس کا علاج نہ کروانا ہوتا  ہے۔

گردے کا کینسر

کام کرنے والی جگہ میں کیمیکل اور سگریٹ نوشی کی وجہ سے مردوں کو خواتین کے مقابلے میں دو گنا گردے کا کینسر ہوتا ہے ، امریکن کینسر سوسائٹی کے مطابق اگر  آپ کو  یورین میں خون  آئے ، کمر کے نچلے حصے میں درد ہو ،بخار کی کیفیت ہو یہ وزن میں کمی آرہی ہو تو  فوراً کسی ڈاکٹر  سے رابطہ کریں ۔

لبلبہ  کا کینسر

 سول گولڈمین  پینکریاٹک   کینسر ریسرچ سینٹر کے مطابق  افریقی اور امریکی مردوں  کو خواتین کے مقابلے میں دو گنا زیادہ لبلبہ کا کینسر  ہوتاہے  کیونکہ مرد خواتین کے مقابلے میں زیادہ سگریٹ نوشی کرتے ہیں اور اسی وجہ سے مردوں کو کینسر ہونے کا زیادہ خطرہ ہوتاہے ۔

مثانے کا کینسر

محققین  کے مطابق کہ  خواتین کے مقابلے میں مرد سگریٹ نوشی زیادہ کرتے ہیں   جو مثانے کے کینسر کا سبب بنتی ہے، یورین میں خون آنے سے مثانے کے کینسر کا اندازہ لگایا جاتا ہے اور اگر کوئی اس مرض میں مبتلا ہے تو فوراً ڈاکٹر  سے رابطہ کرے اور اس کا مکمل علاج کروائے۔

loading...
loading...