ڈپریشن میں اضافہ کرنے والی غذائیں

Image result for depression

دنیا میں ڈپریشن کی ایک وبا کی صورت اختیار کرتا جارہا ہے، ہمارے درمیان موجود ہر تیسرا چوتھھا شخص یاسیت کا شکار ہے۔

اس وقت دنیا میں 32 کروڑ 20 لاکھ سے بھی زیادہ افراد   Anxiety یا Depression کا شکار ہیں۔ جن میں سے 66 فیصد افراد جنوب مشرقی ایشیاء کے ممالک میں رہتے ہیں جب کہ اس مرض میں مبتلا افراد کے حوالے سے دوسرا بڑا خطہ افریقہ ہے۔ امریکا اور یورپی ممالک کے خوشحال افراد بھی اس کے شکار ہیں۔

اس مرض میں مبتلا زیادہ افراد کی عمریں 30 سے 60 سال کے درمیان ہیں، تاہم یہ مرض کم عمری میں بھی لاحق ہوتا ہے۔

اس مرض یا ذہنی کیفیت میں آرام کے لیے اگرچہ متعدد غذائیں موجود ہیں، تاہم کچھ ایسی عام غذائیں بھی ہیں جو اس مرض میں اضافہ کرتی ہیں اور انہیں قابو کرنا ضروری ہے۔

سائنس جرنل ہیلتھ لائن کے مطابق انزائٹی، ڈپریشن، گھبراہٹ اور پریشانی جیسی کیفیات میں عام طور پر لوگ منشیات کا استعمال کرتے ہیں اور ان کا خیال ہوتا ہے کہ ایسا کرنا ان کے لیے فائدہ مند ہوگا۔

تاہم جدید سائنسی تحقیقات کے مطابق منشیات سمیت دیگر غذائیں اور مشروبات جنہیں انزائٹی، ڈپریشن اور پریشانی میں مدد گار سمجھا جاتا ہے، درحقیقت مزید اضافے کا باعث بنتی ہیں۔

ڈپریشن یا پریشانی کے وقت منشیات کا استعمال یعنی شراب یا سگریٹ و دیگر اس میں کمی کے بجائے اضافے کا باعث بنتی ہے۔ منشیات انسانی جسم کی نمکیات، نیند اور ذہنی سکون میں خلل پیدا کرتی ہے۔

چائے اور کافی میں پائے جانے والے مادے کیفین کے انسانی صحت پر کئی بہتر اثرات ہوتے ہیں، تاہم یہ انزائٹی یا ڈپریشن میں کمی کے بجائے اس کے اضافے کا باعث بنتا ہے۔ زیادہ مقدار میں چائے یا کافی پینا ڈپریشن یا انزائٹی میں مزید پریشانی کا باعث بن سکتا ہے۔ تاہم ماہرین نے پریشانی کے وقت کم مقدار میں چائے یا کافی پینے کی تجویز کو مسترد نہیں کیا۔

اسی طرح کولیسٹرول بڑھانے والی غذائیں مثلاً برگر، فرنچ فرائز، پیزا اور دیگر اجزاء انزائٹی بڑھانے میں کردار ادا کرتی ہیں۔

loading...
loading...