مسلمانوں کو حلال خوراک کے مقابلے    حلال آمدنی کے بارے میں احتیاط کرنی چاہئیے،ملائیشین وزیر

فائل فوٹو

فائل فوٹو

کوالالامپور:کوالالامپور کے اسلامی امور کے انچارج اور نائب وزیر   ڈاکٹر اسیرف واجدی کا کہنا ہے کہ  مسلمان اپنی حلال خوراک کے بارے میں بہت زیادہ فکر مند ہوتے ہیں ،جبکہ وہ اس بات کی زیادہ پرواہ نہیں کرتے  کہ ان کی آمدنی کے ذرائع کیا ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ لوگ اسلام کو صرف  عبادت  کے ساتھ جوڑتے ہیں  ،جبکہ حلال اور حرام کا مسئلہ کیا ہے ،اسلام میں کیا جائز ہے،اس بات سے واقف نہیں۔

اسیرف  نے اسلامک فائنا نشل  انسٹی ٹیوٹ اینڈ چیریٹی  کے سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے  کہا کہ  لوگ اس بارے میں زیادہ فکر مند ہوتے ہیں  کہ وہ خوراک استعمال کی جائےجس پر حلال فوڈ کا لیبل لگا ہو اہو ،لیکن انہیں اس بات کی بھی فکر کرنی چاہئے کہ  اس خوراک کو خریدنے کیلئے  جو پیسے خرچ کیے جارہے ہیں وہ حلال ہیں یا نہیں۔

انہوں نے کہا کہ لوگ  گوشت خریدتے وقت اس بات کا خیال رکھتے ہیں کہ  اسے شرعی طریقے سے   ذبح کیا گیا ہے یا نہیں لیکن اسے خریدنے کیلئے استعمال کیا گیا پیسہ    کیسا ہے اس بات کا خیال نہیں رکھتے۔

وہ پیسہ جو وہ  خوراک خریدنے کیلئے  وصول کرتے ہیں ،وہ عموماً  سود خوری اور کرپشن وغیرہ  کرکے  لایا گیا ہوتا ہے  لیکن انہیں اس کی کوئی پرواہ نہیں ،یہ ہمارے معاشرے کی ایک کڑوی سچائی ہے  ،یہ بات انہوں نے وزیر اعظم کے ڈیپارٹمنٹ سے خطاب کے دوران کہی۔

گزشتہ پیر کو   منسٹر سیری جمیل بہاروم کا کہنا تھا کہ  حکام”نان الکوحلک”مشروب کو  حلال سرٹیفیکیٹ  فراہم نہیں کرتے اور ان تمام اجزاء کو جن پر  حرام  کا شبہ ہوتا ہے یا جن کا نام حرام اشیاء سے جڑا ہوتا ہے۔

برناما کی اسٹیٹ نیوز ایجنسی کے مطابق   اسلامی امور   کے وزیر   کا کہنا تھا کہ “حلال مشروب” کی اصطلاح کس طرح استعمال کرسکتے ہیں  ،2011 میں  حکام کی جانب سے جاری کیے جانے والے آرڈرز کے مطابق یہ سرٹیفیکیٹ صرف  فیڈرل اسلامک  ڈیولپمنٹ  ڈیپارٹمنٹ ،اسٹیٹ اسلامک  ڈیپارٹمنٹ  اورکونسل  جاری کرسکتا ہے۔

واضح رہے کہ ملائیشیا میں حلال سرٹیفیکیٹ کے مسئلے نے  گزشتہ اکتو بر کو سر اٹھایا تھا جب  یو ایس پرٹزل کے ایگزیکٹیو نے   ایک درخواست ظاہر کی  جو انہوں نے حلال سرٹیفیکیشن کیلئے دی تھی ،جسے مسترد کردیا گیا تھا ،مسترد کرنے کی وجہ اس کے مینو میں  “پرٹزل ڈاگ”کی موجودگی تھی۔

ملائیشیا کے کچھ فاسٹ فوڈز ریسٹورنٹ   حرام کھانے کی متبادل خوراک مہیا کرتے ہیں جن میں ٹرکی اور گائے کا گوشت وغیرہ شامل ہے ،جبکہ ان کے پاس   سبزیوں کی بھی کافی اقسام موجود ہوتی ہیں۔

Thanks to: themalaymailonline.com