مذہبی زندگی گزارنے والے افراد زیادہ لمبی زندگی پاتے ہیں: تحقیق

ibadat

ایک تحقیق میں حیران کن طور پر لمبی زندگی اور مذہبی اعتقاد  کے درمیان تعلق پایا گیا ہے۔

یونائیٹڈ اسٹیٹس بھر میں ہزار  موت کی خبروں کا تجزیہ کر کے معلوم ہوا کہ چرچ جانے والے افراد دہریوں  کے مقابلے میں چار برس زیادہ زندہ رہے۔

اوہائیو اسٹیٹ کے نفسیات کے محققین  کا ماننا ہے کہ اس تعلق کے پیچھے ایک وجہ ہے۔ وہ لوگ جو مذہب کی جانب راغب ہوتے ہیں اکثر معاشرتی سرگرمیوں میں اپنی زندگی وقف کردیتے ہیں۔ یہ ایک ایسی چیز ہے جو لمبی زندگی سے مسلسل جڑی ہے۔

لیکن محققین کو معلوم ہوا کہ یہ معاشرتی سرگرمیاں بس ایک سال تک زندگی بڑھاتی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ مذہبی زندگی کے دیگر پہلو  اس میں کردار ادا کرتے ہیں جیسے کہ الکوحل سے گریز کرنا وغیرہ۔

تحقیق کے سربراہ مصنف لورا والیس کا کہنا تھا کہ مذہبی رجحان  کے اس کے علاوہ بھی کئی فوائد ہیں جو یہ تحقیق نہیں بتا سکتی۔

ایک اور محقق ڈاکٹر بالڈون کا کہنا تھا کہ تحقیق کے نتائج شاید دہریوں کو بکواس لگیں لیکن  اس میں تعلق ہے جسے وہ نظر انداز نہیں کرسکتے۔

ان کا کہنا تھا کہ تحقیق مضبوط ثبوت فراہم کرتی ہے کہ کسی شخص کی مذہبی زندگی اور وہ شخص کتنا عرصہ زندہ رہتا ہے میں تعلق ہے۔

ڈاکٹر بالڈون نے یہ نتیجہ اخذ کیا کہ یہ تعلق شاید مذہبی شخص کی برادری پر منحصر ہے۔

Daily mail بشکریہ

loading...
loading...