انڈونیشیا میں 14 سالہ لڑکے کا انڈے دینے کا دعوٰی

انڈونیشیا کے شہر گووا میں نوعمر لڑکے نے انڈے دینے کا دعوٰی کردیا۔ اکمل نامی اس لڑکے کا کہنا ہے کہ وہ پچھلے دو سال سے انڈے دیتا آرہا ہے۔ اور اب تک 20 انڈے دے چکا ہے۔

گزشتہ دنوں اس نے ڈاکٹرز کے سامنے دو انڈے دیئے تو ڈاکٹرز اسکی حالت دیکھ کر ہکابکا رہ گئے۔ لڑکے کے باپ نے بھی اس دعوے کی تصدیق کی ہے۔

اکمل گزشتہ دو سال سےمبینہ طور پر اپنی اس حالت کے سلسلے میں ہسپتال میں داخل ہوتا آرہا ہے۔ ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ کسی انسان کے جسم کے اندر انڈے جیسی چیز کا وجود میں آنا ناممکن سی بات ہے۔ لیکن اکمل کا کہنا ہے کہ کبھی ایسا اتفاق بھی نہیں ہوا کہ اسنے کوئی انڈا ثابت نگل لیا ہو۔

اس سارے واقعہ کے بعد ڈاکٹرز نے لڑکے کی حالت کا مطالعہ کرنے کے لئے اسے شیخ یوسف ہسپتال میں زیر نگرانی رکھ لیا ہے۔

بشکریہ : dailymail

loading...
loading...