جیمز اینڈرسن گلین میگرا کا ریکارڈ توڑنے کے بے حد قریب

mcgrath

آج کل کرکٹ مختلف فارمیٹس میں کھیلی جارہی ہے ایسے میں لوگوں کی دلچسپی ٹیسٹ فارمیٹ سے ہٹ کر مختصر دورانیے کی جانب مرکوز ہوگئی ہے، تاہم جو افراد کرکٹ کے اصل رنگ کو سمجھتے ہیں انہیں ٹیسٹ کرکٹ کی اہمیت کا بخوبی اندازہ ہے۔

یہ ایک ایسا فارمیٹ ہے جس میں صرف کھلاڑی کے کھیل کا ہی نہیں بلکہ صبر اور جسمانی قوت کا بھی امتحان ہوتا ہے۔ اگر آپ کرکٹ کی تاریخ کے عظیم کھلاڑیوں کے کیریئر پر نظر ڈالیں تو معلوم ہوگا کہ انہوں نے ٹیسٹ کرکٹ ہی نمایاں کارنامے انجام دے کر خود کو عظیم ثابت کروایا ہے۔

کرکٹ اب ماضی کی نسبت خاصی تبدیل ہوگئی ہے، ماضی میں اس کھیل سے کئی خطرناک فاسٹ بولرز کی وابستگی رہی ہے۔ ان بولرز کی موجودگی میں بلے بازوں کے لئے وکٹ پر رُکنا تک محال لگتا تھا۔ ان فاسٹ بولرز میں کورٹنی والش، رچرڈ ہیڈلی، گلین میگرا، وقار یونس اور وسیم اکرم جیسے نام سرفہرست ہیں۔

تاہم ان تمام عظیم بولرز کو پیچھے چھوڑتے ہوئے انگلینڈ سے تعلق رکھنے والے فاسٹ بولر جیمز اینڈرسن ٹیسٹ کرکٹ میں سب سے زیادہ وکٹیں حاصل کرنے کے بے حد قریب ہیں۔ اس وقت ٹیسٹ کرکٹ میں ان کی وکٹوں کی تعداد 557 ہوچکی ہے جبکہ گلین میگرا کی 563 وکٹوں کا ریکارڈ توڑے کے لئے انہیں مزید 7 وکٹیں درکار ہیں اور یہ امید ظاہر کی جارہی ہے کہ وہ ممکنہ طور پر بھارت کے خلاف چوتھے ٹیسٹ میں یہ کارنامہ انجام دے دیں گے۔

ٹیسٹ کرکٹ میں کسی بھی فاسٹ بولر کی جانب سے سب سے زیادہ 563 وکٹیں آسٹریلیا سے تعلق رکھنے والے گلین میگرا نے حاصل کر رکھی ہیں۔ دوسرے نمبر پر جیمز اینڈرسن 557 وکٹیں، تیسرے پر کورٹی والش 519، چوتھے پر کپل دیو 434 اور پانچویں پر 431 وکٹوں کے ساتھ ریچرڈ ہیڈلی موجود ہیں۔ پاکستان کی جانب سے وسیم اکرم نے 414 جبکہ وقار یونس نے 373 وکٹیں حاصل کیں۔

ٹیسٹ کرکٹ کی تاریخ میں سب سے زیادہ 800وکٹیں سری لنکا کے جادوگر اسپنر مرلی دھرن نے حاصل کی ہیں، 708 وکٹوں کے ساتھ دوسرا نمبر شین وارن کا ہے جبکہ 619 وکٹوں کے ساتھ بھارت کے انیل کمبلے تیسرے نمبر پر براجمان ہیں۔

loading...
loading...