فہیم اشرف اور فخر زمان نے رمیز راجہ کی خواہش پوری کردی

122

پاکستان اور زمبابوے کے درمیان کھیلی جارہی 5 ون ڈے میچز کی سیریز کے دوسرے میچ میں 9 وکٹوں سے فتح حاصل کرنے کے بعد سابق کپتان اور موجودہ کمنٹیٹر رمیز راجہ کا کہنا تھا کہ انہیں آج کے میچ میں بالکل مزہ نہیں آیا۔

ایک ٹویٹ میں انہوں نے شائستگی سے اس بات کا بھی اظہار کردیا تھا کہ آج کے میچ میں کوئی شاندار کارکردگی یعنی کسی بولر کی جانب سے کیا گیا تباہ کن اسپیل یا کسی بلے باز کی جانب سے 50 گیندوں پر سینچری دیکھنے کو نہیں ملی۔

رمیز راجہ نے اپنی ٹویٹ میں اس بات کا اظہار کیا تھا کہ کوئی پاکستانی بلے باز ڈبل سینچری کے بارے میں کیوں نہیں سوچتا؟ ان کا کہنا تھا کہ اگر زمبابوے جیسی کمزور حریف کے خلاف بھی نہیں کریں گے تو کب کریں گے؟

:ٹویٹ ملاحظہ کریں

اگر دیکھا جائے تو ورلڈ کپ 2019 کو مدنظر رکھتے ہوئے ایسا سوچنا انتہائی ضروری بھی ہوچکا ہے کیونکہ باقی ٹاپ ٹیمیں جارحانہ کھیل پیش کرکے اپنی کرکٹ میں بہتری لاتی جارہی ہیں۔   تاہم لگتا ایسا ہے جیسے سابق کپتان کی اس بات کو پاکستانی کھلاڑیوں نے دل پر لے لیا اور شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرکے انہیں خوش کردیا۔   تیسرے ایک روزہ میچ میں جب یہ دونوں ٹیمیں میدان میں اتریں تو فہیم اشرف کی تباہ کن بولنگ نے زمبابوین بیٹنگ لائن کے پرخچے اڑا کر رکھ دیئے اور پوری زمبابوے کی ٹیم محض 67 کے اسکور پر آؤٹ ہوگئی۔ فہیم اشرف 5 وکٹیں حاصل کرکے میچ کے بہترین کھلاڑی قرار پائے۔  

لیکن جب چوتھے ون ڈے میں ٹاس پاکستانی کپتان نے جیتا تو یہ خبر زمبابوے کے لئے کسی شامت سے کم نہ تھی پاکستانی اوپنرز نے زمبابوین گیند بازوں کی درگت بناتے ہوئے ورلڈ ریکارڈ اوپننگ پارٹنرشپ قائم کردی۔ امام الحق سینچری بنا کر آؤٹ ہوئے جبکہ نوجوان بلے باز آصف علی نے بھی دھواں دھار نصف سینچری اسکور کی۔

تاہم اس میچ میں فخر زمان نے شاندار اننگز کھیلتے ہوئے ڈبل سینچری جڑ ڈالی، یہ پہلا موقع تھا جب کسی پاکستانی بلے باز نے ون ڈے کرکٹ میں 200 یا اس سے زائد رنز اسکور کئے ہوں۔ اس سے قبل کسی بھی پاکستانی بلے باز کا سب سے بڑا انفرادی اسکور 194 تھا جو بھارت کے خلاف 1997 میں سعید انور نے اسکور کیا تھا۔

فخر زمان نے اس میچ میں پورے 50 اوورز بیٹنگ کی اور 5 چھکوں اور 24 چوکوں کی مدد سے ناقابل شکست 210 رنز اسکور کئے۔ یوں سابق کپتان کی وہ خواہش بھی پوری ہوگئی جو وہ پاکستانی کھلاڑیوں کی جانب سے دیکھنا چاہتے تھے۔ تیسرے ون ڈے میں فہیم نے 5 وکٹیں جبکہ چوتھے ون ڈے میں فخر نے ڈبل سینچری جڑ ڈالی۔

رمیز راجہ نے اپنی خوشی کا اظہار اس ٹویٹ کے ذریعے کیا۔ آپ بھی ملاحظہ کریں۔

loading...
loading...