روس میں انوکھے مینڈک دریافت

فائل فوٹو-

فائل فوٹو-

روسی سائنسدانوں نے عجیب وغریب اضافی اعضاء ، شفاف جلد اور نمایاں ڈھانچے والے انوکھےمینڈک دریافت کر لئے۔مینڈک کے اندردھڑکتا ہوا دل بھی دیکھا جاسکتا ہے جب کہ سائنسدانوں نے اس کی وجہ آلودگی کو قرار دیا ہے۔

روس کے تیومن اوبلاسٹ خطے کے مرکزی علاقے کراسنوریسک سے دریافت ہونے والے مینڈکوں کے جسم شفاف ہیں اور ان کے کندھوں پر کوئی غیرمعمولی شے بھی دیکھی گئی ہے ۔

اورل فیڈرل ڈسٹرکٹ یونیورسٹی کے ماہرین کے مطابق مینڈکوں کی جلد میں  پگمنٹ نہ ہونے کی وجہ سےیہ شیشے جیسے بن گئے ہیں، ان کی آنکھیں سیاہ ہوگئی ہیں اور پیٹ کے آرپار دل سمیت تمام اندرونی اعضاء نظر آرہے ہیں جب کہ اس کی وجہ ماحولیاتی آلودگی ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ مینڈک کے انڈوں میں کوئی جھلی نہیں ہوتی جو انہیں آلودگی سے بچا سکے ۔ تاہم اس حوالے سے مزید تحقیق کی جارہی ہےکہ مینڈکوں کو آخر کیا ہوا ہے۔

ماہرین کے مطابق یہ مینڈک کیمیکل پلانٹ کے قریب سے ملے ہیں اور کیمیکل ڈرموں سے رسنے والے مواد نے پوری جھیل کو نارنجی کردیا ہے جس سے مینڈکوں میں تبدیلی آئی ہے۔ اس علاقے میں سونے، چاندی، تانبے اور دیگر دھاتوں کے ذخائر ہیں جنہیں نکالنے کے لیے کیمیکل استعمال کیا جاتا ہے۔

بشکریہ ڈیلی میل

loading...
loading...