واٹس ایپ میں موجود بڑے مسئلے کی نشاندہی

1

اسرائیلی سائبر سیکیورٹی فرم کے محققین نےواٹس ایپ کے اندر بڑے مسئلے کی شناخت کی ہے۔

ان محققین کا کہنا ہے کہ انہوں نے واٹس ایپ میں ایک ایسا مسئلہ ڈھونڈا ہے جس کو استعمال کرتے ہوئے ہیکرز میسجنگ ایپ پر جعلی میسجز بھیج سکتے ہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ یہ کمزوری ہیکرز کیلئے مداخلت کرنے اورمیسجز میں ردوبدل کرنے کے ساتھ ساتھ غلط خبریں بنانے اور پھیلانے کیلئے مددگار ثابت ہوسکتی ہے۔

واٹس ایپ میں موجود اس خرابی کے متعلق رپورٹ تب آئی ہے جب اس میں غلط خبروں کے پھیلائے جانے کے مسئلے کے متعلق جانچ پڑتال کی جارہی ہے۔

گزشتہ ماہ ایپلیکیشن نے بھارتی حکومت کے کہے جانے پر خطرات کے پیشِ نظر فارورڈ میسج بھیجنے کی حد مقرر کی تھی۔

واٹس ایپ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ کمپنی دیہان سے اس مسئلے کو دیکھ رہی ہے اور اس مسئلے میں ای میل میں ردوبدل کرکے وہ کچھ لکھ دیا جاتا جو لکھنے والے نہ لکھا ہو۔

تاہم واٹس ایپ کا کہنا ہے کہ اس چیز کا اینڈ ٹو اینڈ انکرپشن سےکوئی لینا دینا نہیں ہے جو اس بات کو باور کراتا ہے کہ صرف میسج بھیجنےاور موصول کرنے والا ہی میسج کو پڑھ سکتا ہے۔

Phys.org بشکریہ

loading...
loading...