فیئرنیس کریم استعمال کرنے والوں کیلئے بُری خبر

Untitled-1

اگر آپ بھی فئیرنیس کریم اس امید پر استعمال کرتے ہیں کہ آپ گورے ہوجائیں گے تو جان لیں کہ آپ کا یہ سہانا خواب کبھی پورا نہیں ہوسکتا۔

اس کی وجہ؟ کیونکہ تحقیق نے اس بات کو غلط ثابت کردیا ہے کہ  رنگ گورا کرنے والی کریموں سے رنگ صاف ہوتا ہے۔

بوسٹن یونیورسٹی اسکول آف میڈیسین کی تحقیق میں یہ جاننے کی کوشش کی گئی کہ ان کریموں کیا فائدہ ہوتا ہے یا یہ کس حد تک موثر ثابت ہوتی ہیں۔

اس کیلئے ایسے متعدد افراد کا جائزہ لیا گیا جو اس طرح کی رنگ ہلکا کرنے والی کریموں کا استعمال کرتے تھے.

فروری 2015 سے جولائی 2016 تک جاری رہنے والی اس تحقیق میں 4  سو سے زائد افراد نے حصہ لیا، جس دوران معلوم ہوا کہ اکثر ان کریموں کے استعمال جلد پر سیاہ دھبے پڑنے یا hyperpigmentation (نسیجوں کی زیادتی) کی وجہ سے کیا جاتا ہے۔

تحقیق کے دوران 50 فیصد سے کم افراد نے جلد کی رنگت میں بہتری کو رپورٹ کیا، جبکہ بازار میں دستیاب عام کریموں میں یہ نتیجہ اس سے بھی زیادہ بدتر تھا، جن کو استعمال کرنے والے صرف 26.5 فیصد افراد نتائج سے مطمئن رہے۔ ان میں سے بھی بیشتر ایسے افراد تھے جنھوں نے ٹرپل کمبینیشن کریم کو استعمال کیا۔

محققین کا کہنا تھا کہ اس تحقیق سے جلد کی رنگت بہتر بنانے والی مصنوعات استعمال کرنے والے افراد کے حوالے سے اہم پہلوﺅں پر روشنی ڈالی گئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ 50 فیصد سے زیادہ رضاکار ان کریموں سے مطمئن نہیں تھے. ان کا مزید کہنا تھا کہ کریموں کے استعمال سے  hyperpigmentation  میں کسی قسم کی بہتری نہیں آئی۔

محققین کے مطابق اکثر ایسے افراد کو ڈاکٹر شعور دے کر انہیں زیادہ بہتر مصنوعات کا مشورہ دے سکتے ہیں جبکہ فیئرنیس کریموں کے استعمال کے مضر اثرات سے آگاہ کرسکتے ہیں۔

بشکریہ Hindustan Times

loading...
loading...