یہ آٹھ چیزیں کبھی بھی  فیس بک پر شئیر مت کریں

فائل فوٹو

فائل فوٹو

سوشل میڈیا کا بخار آج کل سب کو ہے۔ پانی بھی پیا جاتا ہے تو آدھی دنیا کو بتا کر۔ لیکن کچھ ضروری چیزیں ایسی ہیں جنہیں فیس بک پر شئیر کرنا آپ کیلئے انتہائی نقصاندہ ثابت ہو سکتا ہے۔

٭ گھر کا پتہ

کیا آپ چاہیں گے کہ کوئی اجنبی آپ کے گھر آئے اور کہے کہ میں آپ کا دوست ہوں ہم فیس بک فرینڈز ہیں؟ یقیناً نہیں۔ اس لئے کبھی بھی اپنا رہائشی پتہ فیس بک پر پوسٹ نہ کریں۔

٭ غیر مصدقہ بڑی خبر

کبھی بھی کسی بھی حوالے سے کوئی بڑی خبر فیس بک پر شئیر نہ کریں۔ ایسا کرنے سے آپ مصیبت کا شکار ہو سکتے ہیں۔

٭ ذاتی نوعیت کی تصاویر

آپ دوستوں کے ساتھ سیلفی لیتے ہیں۔ ضرور لیں۔ لیکن ہوسکتا ہے سیلفی میں موجود تمام دوست اسے سوشل میڈیا پر نہ شئیر کرنا چاہتے ہوں۔ اس لئے اگر شئیر کرنی بھی ہے تو ان تمام ھضرات سے ضرور پوچھ لیں۔

٭ سیاسی نظریات

ہر انسان کو کسی نہ کسی سیاسی شخصیت یا نظریے سے اختلاف ہوتا ہے۔ لیکن ضروری نہیں کہ اس کا ڈھنڈورا پیٹا جائے۔ اگر آپ شدید الفاظ کا استعمال کرتے ہیں تو اس کا اثر آپ کی نوکری سے لیکر دوستی تک ہوتا ہے۔

٭ دھمکی

کسی کو دھمکی دینا انتہائی برا ہے۔ اور اسے آن لائن دھمکانا اس سے بھی برا ہے۔ یہ ایک جرم ہے کیونکہ ہر کوئی اسے مذاق نہیں سمجھتا۔ اس لئے یہ آپ کیلئے مصیبت بن سکتا ہے۔

٭ رشتوں کی ناچاکیاں

کسی کو فرق نہیں پڑتا کہ آپ کا بریک اپ ہوا ہے یا آپ کے رشتوں میں کشیدگی پیداہوگئی ہے۔ اس لئے اسے سوشل میڈیا پر ڈالنے کے بجائے خود اس سے نبرد آزما ہوں اور اس کا حل نکالیں۔ ورنہ لوگ آپ کو توجہ طلب انسان سمجھیں گے۔

٭ کام سے متعلق شکایات

اگر آپ کو اپنی ملازمت والی جگہ پر کوئی پریشانی ہے تو آپ کا حق ہے کہ آپ اسے کسی سینئیر سے تبادلہ خیال کریں۔ لیکن اسے کبھی بھی سوشل میڈیا پر شئیر نہ کریآں کیونکہ یہ اس ادارے یا شخص کی ہتک عزت کا باعث بن سکتا ہے۔

٭ بینک بیلنس

کبھی بھی اپنے بینک اکاؤنٹ کی معلومات یا آپ کے پاس موجود پیسوں کی معلومات سوشل میڈیا پر مت شئیر کریں۔ یہ بالکل چوروں کیلئے ‘آ بیل مجھے مار’ کے مصداق ہوگا۔

بشکریہ MSN

loading...
loading...