فلیمنگو ایک ٹانگ پر کیوں کھڑے ہوتے ہیں؟

-Smithsonian Magazine

-Smithsonian Magazine

آپ نے اکثر فلیمنگو یا لال لمٹنگو کو ایک ٹانگ پر کھڑا دیکھا ہوگا۔ لیکن یہ ایسا کیوں کرتے ہیں؟ یہ ان کی عادت ہے یا اس کے پیچھے کوئی خآص وجہ پوشیدہ ہے؟

حالیہ تحقیق میں انکشاف ہوا ہے کہ فلیمنگو جسمانی توانائی بچانے کیلئے ایک ٹانگ پر کھڑے ہوتے ہیں۔

امریکی تحقیقاتی ٹیم کے مطابق فلیمنگو ایک ٹانگ پر جب کھڑے ہوتے ہیں تو اپنے متحرک عضلات کا استعمال نہیں کرتے۔ اس طرح وہ اپنی توانائی بچاتے ہیں۔

ایک ٹانگ پر کھڑے رہنے کے دوران ایک خاص سست میکینزم کار فرما ہوتا ہے جو انہیں سستانے کے دوران بھی گرنے نہیں دیتا۔

پہلے محققین کچھ کا خیال تھا کہ اس طرح کھڑے ہونے کی وجہ ایک ٹانگ کو آرام دینا ہے جبکہ کچھ مانتے تھے کہ فلیمنگو ایسا درجہ حرارت درست رکھنے کیلئے کرتے ہیں۔

لیکن اب اٹلانٹا میں قائم جارجیا انسٹی ٹیوٹ آف ٹکنالوجی کے پروفیسر ینگ ہوئی چانگ اور اٹلانٹا ایموری یونیورسٹی کی لینا ایچ ٹنگ نے زندہ اور مردہ دونوں قسم کے پرندوں کےساتھ کئی تجربات کیے اور دریافت کیا کہ مردہ فلیمنگو کو کسی سہارے کے بغیر بھی ایک ٹانگ پر کھڑا کیا جاسکتا ہے۔

انھوں نے اس انوکھی چیز کو ‘مجہول قوت ثقل پر مبنی میکانزم’ قرار دیا۔

پروفیسر چانگ کا کہنا ہے کہ اگر آپ اس پرندے کو ایک ٹانگ پر کھڑے ہوتے وقت سامنے سے دیکھیں تو آپ پائیں گے کہ ان کے پاؤں بالکل ان کے جسم کے نیچے ہیں یعنی اندر کو جھکے ہوئے ہیں۔ اور یہی وہ ہیت ہے جسے وہ کھڑے رہنے کی میکانزم کے طور پر استعمال کرتے ہیں۔

انھوں نے زندہ فلیمنگو پر بھی تجربات کیے اور یہ پایا کہ جب وہ ایک پاؤں پر کھڑے ہوتے ہیں تو وہ بہ مشکل ہی حرکت کرتے ہیں اور اگر وہ حرکت کرتے ہیں تو ان کے بدن ایک طرف کو جھول جاتے ہیں۔

 بشکریہ بی بی سی

loading...
loading...