خیبرپختونخوا کامالی سال 20-2019 کا بجٹ آج پیش کیا جائے گا

فائل فوٹو

فائل فوٹو

پشاور:خیبرپختونخوا مالی سال 20-2019کا بجٹ آج پیش کیا جائے گا،بجٹ کا کل حجم 900 ارب روپے مختص کیا گیا ہے جس میں صحت کیلئے 55 ارب روپے مختص کیلئے گئے ہیں۔

خیبرپختونخوا کابینہ کا اجلاس 10:15 بجے طلب کیا گیا ہے جبکہ حکومت نے بجٹ اجلاس آج دوپہر 3 بجے صوبائی اسمبلی میں طلب کرلیا۔

جہاں آئندہ مالی سال 20-2019کا بجٹ آج پیش کیا جائےگا، وزیرخزانہ خیبرپختونخوا ایوان میں بجٹ پیش کریں گے،بجٹ کا کل حجم 900ارب روپے رکھا گیا ہے۔

خیبرپختونخوا کا فنانس بل بھی آج پیش کیاجائےگا،وزیرخزانہ رواں مالی کاضمنی بجٹ بھی پیش کریں گے جبکہ خیبرپختونخوا اسمبلی میں بجٹ پربحث کا آغاز21جون سےہوگا۔

سی سی پی او کے مطابق بجٹ کے اجلاس کیلئے سیکیورٹی کے بھی سخت انتظامات کئے گئے ہیں ،اجلاس کیلئے 270 پولیس اہلکار تعینات ہوں گے ۔

خیبر روڈ پر ٹریفک کو رواں دواں رکھنے کی خاطر ٹریفک پولیس کی اضافی نفری تعینات کی جائے گی اور بکتر بند گاڑی کو بھی طلب کیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق بجٹ کا کل حجم 900 ارب روپے مختص کئے گئے ہیں جس میں صحت کا بجٹ 46 ارب سے بڑھا کر 55 ارب کرنے کی تجویز کی گئی جبکہ پولیس کیلئے 48 ارب روپے مختص کئے گئے ہیں۔

سالانہ ترقیاتی پروگرام کیلئے 236 ارب روپے مختص کرنے کی تجویز کی گئی ہے، اے ڈی پی میں 108 صبوبائی حصہ ہے جبکہ 82 ارب کی غیر ملکی امداد اور قرضہ بھی شامل ہے،46 ارب روپے مقامی حکومتوں کیلئے رکھنے کی تجویز کی گئی ہے۔

ضم شدہ قبائلی اضلاع کیلئے 162 ارب روپے رکھنے کی تجویز کی گئی ہے، 83 ارب سالانہ ترقیاتی پروگرام 17 ارب قبائلی اضلاع کے متاثرین کیلئے رکھنے کی تجویز کی گئی ہے۔

صوبائی وزیراطلاعات شوکت یوسفزئی کے مطابق گریڈ 1 سے 16 تک کے سرکاری ملازمین کی تنخواہوں 10 فیصد اور گریڈ 17 سے 19 تک کے ملازمین کی تنخواہوں میں 5 فیصد اضافہ کیا جائے گا۔

زرعی منصوبوں کیلئے 2 ارب 20 کروڑ روپے مختص کئے جانے کی تجویز جبکہ بلین ٹری پراجیکٹ کیلئے 1 ارب 80 کروڑ روپے رکھے جائیں گےجبکہ سیاحت کے فروغ کیلئے 17 ارب روپے رکھنے کی تجویز کی گئی ہے۔

loading...
loading...