‘بلاول اور آصف زرداری اپنا پیسا تھر کے عوام کیلئے خرچ کریں’

saqibnisarimage

اسلام آباد: تھر میں بچوں کی غذائی قلت سے اموات پر سپریم کورٹ میں سماعت ہوئی۔

دوران سماعت چیف جسٹس ثاقب نثار نے بلاول بھٹو اور آصف زرداری سے درخواست کہ کہ وہ اپنا پیسا تھر کے عوام کیلئے خرچ کریں۔

چیف جسٹس نے کہا تھر میں بچوں کی اموات رکنی چاہیئں، اب کسی بچے کو مرنے نہیں دیں گے۔

چیف جسٹس نے کہا بھیک مانگیں یا خیرات لیں، تھر کے لوگوں کو سہولیات ملنی چاہیے، تین ہفتوں میں رپورٹ دیں۔ چیف جسٹس نے اتوار کو مٹھی کے دورے کا اعلان کردیا۔

ایڈووکیٹ جنرل سندھ نے بتایا کہ تھر کے لوگوں کو گندم اور غذائی اجناس مہیا کردی گئی ہیں۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ غیر معیاری خوراک نہیں ہونی چاہیے۔ معیاری خوراک اور طبی سہولتیں بھی دی جائیں۔ مٹھی میں نوزائیدہ بچے فوت ہورہے ہیں۔ یہ انسانی حقوق کا معاملہ ہے، ریاست نے اِن لوگوں کے مسائل حل کرنا ہے۔

چیف جسٹس نے کہا جب جاؤں گا تو تمبو قناعتیں نہ لگائیں، جیسے وزرا کیلئے بندوبست کیا جاتا ہے ویسا بندوبست نہ کیا جائے۔

دوران سماعت پانی کی قلت سمیت دیگر مسائل کا ذکر ہوا

تو چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ ایک دن میں جادوئی دیوار نہیں کھڑی کرسکتے۔ آج کام شروع ہوگا تو چیزیں بند ہوں گی۔

 سپریم کورٹ نے تھر کے تمام اسپتتالوں میں طبی سہولیات فراہم کرنے کا حکم دیتے ہوئے تین ہفتوں میں تفصیلی رپورٹ طلب کرلی۔

ساتھ ہی مزید کہا کہ تین ہفتوں میں پانی اور خوراک کی قلت کو بھی ختم کیا جائے۔

loading...
loading...