بھارت سے کہا جائے وہ مہم جوئی سے بازرہے: شاہ محمود کا یو این جنرل سیکریٹری سے مطالبہ

فائل فوٹو

فائل فوٹو

نیویارک:پاکستانی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نےکشمیر میں بھارتی خلاف ورزیوں کا معاملہ اقوام متحدہ کے سامنے اُٹھا دیا۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اوراقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل انٹونیو گوتیرس کے درمیان  ملاقات ہوئی۔

ملاقات میں وزیرخارجہ نے کہا کہ مسئلہ کشمیرکاحل اقوام متحدہ کی قراردادوں کےمطابق ہونااہم ہے۔مسئلہ کشمیر کا پُرامن حل کشمیریوں کی خواہشات کاعکاس ہوناچاہیئے۔

انہوں نے سیکریٹری جنرل سے مطالبہ کیا کہ بھارت سے کہا جائے وہ مہم جوئی سے بازرہے۔

شاہ محمود قریشی نے او آئی سی کے جموں و کشمیر رابطہ گروپ اجلاس میں بھی پاکستان کا مؤقف پیش کیااور بتایا کہ مقبوضہ کشمیر سے متعلق اقوام متحدہ کی رپورٹ نے اجلاس کی اہمیت بڑھا دی تھی اور اس رپورٹ نے نیا تجسس اور نئی بحث کو جنم دیا ہے۔

شاہ محمود قریشی نے روسی ہم منصب سرگئی لاروف سے بھی ملاقات کی جس میں تجارت، سرمایہ کاری سمیت متعدد امور پر تبادلہ خیال کیا۔

دوسری جانب امریکی نشریاتی ادارے کوانٹرویو میں شاہ محمود قریشی نے امن کیلئے پاکستانی قربانیوں کا ذکر کیا۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ سرحد پار دہشتگردوں کے ٹھکانے ہیں اور کچھ قوتیں ان دہشتگردوں کو پاکستان کےخلاف استعمال کررہی ہیں۔

انہوں نے کہا افغانستان کے مسئلے کو طاقت سے حل نہیں کیا جاسکتا، امن صرف مذاکرات سے ہی آئے گا۔

loading...
loading...