پاناما فیصلے پر مکمل تعاون کاعندیہ

File Photo

File Photo

اسلام آباد: وزیرداخلہ چودھری نثار نے پاناما فیصلے پر حکومت کی جانب سے مکمل تعاون کا اعلان کرتے ہوئے واضح کیاہےکہ مشترکاتحقیقاتی ٹیم کا حکم تین ججوں نے نہیں بلکہ بنچ کےتمام پانچ ججوں کا ہے ڈان لیکس کی رپورٹ تین دن میں آجائے گی۔

چودھری نثار نے ٹیکسلا میں میڈیا کوبریفنگ میں کہاکہ پاناما مقدمہ کے فیصلے پر اپوزیشن والی اپنی مرضی کی تشریح کررہے ہیں، ابھی تو مقدمہ چل رہا ہے، حتمی فیصلہ تو مشترکا تحقیقاتی ٹیم کی رپورٹ کی بنیاد پر ہونا ہے ۔

چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ پاناما پر عبوری حکم آیا اس میں عدالتی قواعد کےمطابق بنچ کا کوئی بھی رکن متفق نہ ہوتا تو وہ خود کو الگ کرسکتا تھا لیکن ، ایسا نہیں ہوا۔

انہوں نے سوئس اکاؤنٹس اور سرے محل کا تنقیدی ذکر دہرایا اور کہاکہ یہ تو قیامت کی نشانی ہےکہ آصف علی زرداری ، دیانت اور صداقت والے آرٹیکل  باسٹھ اور  تریسٹھ پر لیکچر دیں ۔

وزیرداخلہ نے کہاہےکہ وزیراعظم نے سخت ہدایت کی ہےکہ عدالتی فیصلہ پر کوئی تقسیم نہ کی جائے، حکومت ، پاناما فیصلے کی بھرپور حمایت کرتی ہے اور عملدرآمد میں مکمل تعاون کریگی۔