پاناما فیصلہ، اپوزیشن کی قومی اسمبلی میں ہنگامہ آرائی

File Photo

File Photo

اسلام آباد: اپوزیشن کی جانب سے وزیراعظم کے استعفی کے مطالبے پرقومی اسمبلی میں ہنگامہ آرائی اورایک دوسرے کیخلاف نعرے بازی ہوئی ۔ عمران خان طویل عرصہ بعد اجلاس میں آئے لیکن حکومتی ارکان نے انہیں بولنے کا موقع نہیں ملنے دیا ۔

قومی اسمبلی اجلاس میں علامتی احتجاج کیلئے اپوزیشن ارکان بازؤں پرسیاہ پٹیاں باندھ کر شریک ہوئے ۔ تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان بھی طویل عرصہ بعد اجلاس میں شریک تھے ۔

اپوزیشن لیڈرخورشیدشاہ کا کہنا تھا کہ پاناما تحقیقات کیلئے سپریم کورٹ نے جو مشترکہ ٹیم بنائی وہ کیسے ایک وزیراعظم سے تحقیقات کرے گی ، جمہوری نظام اور پارلیمنٹ کو بچانے کے لئے نوازشریف مستعفیٰ ہوجائیں ۔

خورشید شاہ نے عمران خان کو اجلاس میں اظہارخیال کا موقع دینے کا مطالبہ کیا تو حکومتی اراکین نے شور شرابہ شروع کر دیا۔

جواب میں اپوزیشن ارکان نے سپیکر ڈائس کا گھیراؤ کیا اور اجلاس کے ایجنڈے کی کاپیاں پھاڑ دیں ۔ اسی ہنگامے کے دوران قومی اسمبلی کااجلاس غیرمعینہ مدت تک کے لئے ملتوی کردیا گیا۔