نواز کی احتساب عدالت سے فیصلے میں کچھ دن تاخیر کی درخواست

فائل فوٹو

فائل فوٹو

لندن:سابق وزیر اعظم نواز شریف کہتے ہیں کہ کمرہ عدالت میں کھڑا ہوکر فیصلہ سننا چاہتا ہوں۔ چند دن کیلئے فیصلہ مؤخر کیا جائے۔

لندن میں میڈیا سےگفتگو کرتے ہوئےنواز شریف کا کہنا تھاکہ میں عوام کا نمائندہ ہوں، فوجی آمر نہیں جو بھاگ جاؤں۔

سابق وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ بیگم کلثوم نواز 21روز سے وینٹی لیٹر پر ہیں۔ جیسے ہی اہلیہ کی طبیعت ٹھیک ہوگی، پاکستان جاؤں گا۔

انہوں نے کہا کہ میں تین دن کیلئے یہاں آیا تھا۔ نہیں معلوم تھا اتنے دن رکنا پڑے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ ووٹ کی عزت کیلئے ہر قربانی کیلئے تیار ہوں۔اللہ کے فضل سے بھاگوں گا نہیں۔

انہوں نے مزید یہ بھی کہا کہ ادارے ان کاموں کیلئے نہیں بنائے گئے تھے جو کام وہ کر رہے ہیں۔چند افراد کی وجہ سے ادارے بدنام ہو رہے ہیں۔

نواز شریف  نے فیصلے سے متعلق کہا کہ کمرہ عدالت میں کھڑا ہو کر فیصلہ سننا چاہتا ہوں۔ چند دن کیلئے فیصلہ مؤخر کیا جائے۔اگر فیصلہ حق میں آیا توبھی قبول کروں گا، خلاف آیا تب بھی قبول کروں گا۔

واضح رہے احتساب عدالت چھ جولائی کو ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ سنائے گی۔


loading...
loading...