نوازشریف کی پارٹی صدارت کیخلاف درخواستوں کی ابتدائی سماعت کا تحریری حکم جاری

فائل فوٹو

فائل فوٹو

اسلام آباد:سپریم کورٹ نے نوازشریف کی پارٹی صدارت اور دیگر انتخابی قوانین کےخلاف دائر درخواستوں کی ابتدائی سماعت کا تحریری حکم جاری کردیا۔

سپریم کورٹ نے نوازشریف کی پارٹی صدارت اور دیگر انتخابی قوانین کےخلاف دائر درخواستوں کی ابتدائی سماعت کا تحریری حکم جاری کردیا۔

 اپوزیشن جماعتوں نے الیکشن ایکٹ کی مختلف شقوں کے خلاف سپریم کورٹ میں 13 درخواستیں دائر کی تھیں۔

عدالت نے تیرہ درخواستوں میں سے صرف نوازشریف سے متعلق معاملہ قابل سماعت قرار دے دیا ہے۔

چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نےتحریری حکم میں لکھاہےکہ آئین کی شق 62 ون ایف کے تحت نااہل نوازشریف کی پارٹی صدارت کو آئین کی شق نو اور 17 کے تناظر میں دیکھا جاسکتا ہے۔ نااہلی کو آئین کی شق 63 اے پر پرکھا جاسکتا ہے۔

 تحریری حکم کے مطابق 13 درخواستوں والے اس مقدمہ میں الیکشن ایکٹ 2017ء کی دیگر دو شقیں نو اور 17 کو بھی چیلنج کیا گیا لیکن یہ معاملہ سماعت کیلئے  میرٹ پر پورا نہیں اترتا۔

نوازشریف کی پارٹی صدارت کےخلاف سپریم کورٹ میں اس مقدمہ کی آئندہ سماعت 23 جنوری کو ہوگی۔

loading...
loading...