نقیب قتل کیس: قبائلی عمائدین کا دھرنا تیسرے روز بھی جاری

ریحام خان کا قبائلی عمائدین سے اظہار یکجہتی

ریحام خان کا قبائلی عمائدین سے اظہار یکجہتی

اسلام آباد:نقیب اللہ محسود کے قتل کےخلاف اسلام آباد میں قبائلی عمائدین کا دھرنا تیسرے روز بھی جاری ہے۔

 نقیب اللہ محسود کے قتل کےخلاف وفاقی دارلحکومت اسلام آباد میں نیشنل پریس کلب کے باہر قبائلی عمائدین کا دھرنا تیسرے روز بھی جاری ہے۔مظاہرین راؤ انوار کی گرفتاری کا مطالبہ کر رہے ہیں۔

ریحام خان سمیت سیاسی اور مذہبی رہنما بھی مظاہرین سے اظہار یکجہتی کیلئے دھرنے میں پہنچے۔

اس موقع پر دھرنے کے شرکاء اور میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے ریحام خان کا کہنا تھا کہ نقیب اللہ کے ماورائے عدالت قتل کےخلاف مظاہرین کا دھرنا بڑے مقصد کیلئے ہے ۔

ریحام خان نے مزید کہا کہ اگر کوئی پاکستانی پشتون کپڑوں میں ہو تو اسے دہشتگرد اور انتہاء پسند کہتے ہیں۔

مظاہرین سے خطاب کرتے ہوے سیاسی رہنماوں کا کہنا تھا ہم اسی لباس اور چادر کے ساتھ انگریزوں سے لڑے تھے، ہم پاکستان کیلئے لڑے، اب یہ ناانصافی نہیں ہونے دیں گے اور یہ دھرنا نہیں ختم کریں گے جب تک کہ ہمیں انصاف نہ مل جائے۔

loading...
loading...