عمران خان کے گھر کی تعمیر کا این او سی جعلی قرار

فائل فوٹو

فائل فوٹو

اسلام آباد:چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کی بنی گالا رہائش سے متعلق رپورٹ سی ڈی اے نے سپریم کورٹ میں جمع کرادی۔

رپورٹ کے مطابق عمران خان کی جانب سے جو این او سی پیش کیا گیاوہ کمپیوٹرائزڈ ہے جبکہ2003 میں یونین کونسل کا تمام ریکارڈمینول اور ہاتھ سے تحریر کیا جاتا تھا۔

اس سال عمران خان سے گھر کا تعمیراتی نقشہ بھی مانگا گیا تھالیکن وہ آج تک فراہم نہیں کیا گیا۔

محکمہ مال نے اپنی رپورٹ میں لکھا ہے کہ بنی گالا کیلئےتین سوکنال زمین 2002 میں جمائما خان کے نام پر خریدی گئی لیکن نہ تو خریدار کا شناختی کارڈ پیش کیا گیا نہ ہی وزارت داخلہ سے خریداری کا کوئی این او سی لیا گیا۔

کچھ عرصے بعد جمائما نے یہ زمین مختارنامے کے ذریعے عمران خان کو گفٹ کردی لیکن اراضی کی منتقلی میں نہ تو جمائما پیش ہوئیں نہ ہی انکا کوئی نمائندہ آیا۔

صرف ایک جگہ اُن کی جانب سے ریٹائرڈ میجر بطور نمائندہ پیش ہوئے۔

loading...
loading...