شام: مبینہ کیمیائی حملے میں 70افراد جاں بحق

فائل فوٹو

فائل فوٹو

شام کے شہر دومامیں مبینہ کیمیائی حملےمیں 70افراد جاں بحق ہوگئے۔شامی حکومت نے کیمیائی حملے کی خبروں کو من گھڑت قرار دے دیا۔

شام میں ایک بار پھر قیامت برپا ہوگئی شہر غوطہ کے بعد دوما کو جہنم بنادیا گیا۔

دوما میں مبینہ کیمیائی حملہ کیاگیا جس نے کئی انسانی جانیں نگل لیں۔

شامی امدادی ٹیم وائٹ ہیلمٹ کے مطابق ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔

حملے کے بعد ہرطرف زہریلی گیس پھیل گئی۔

امدادی کارکنوں نے آکسیجن ماسک کی مدد سے معصوموں کی جانیں بچائیں۔

حملے میں بچے بھی متاثر ہوئے امریکا نے اس مبینہ مہلک حملے کی مذمت کردی۔

ترجمان امریکی محکمہ خارجہ ہیدر نوئرٹ کا کہنا ہے کہ دوما کی خراب صورتحال کا جائزہ لے رہے ہیں۔ ہلاکتوں کی ایک بڑی تعداد کی اطلاعات ہیں۔ جن میں شیلٹرز میں چھپنے والے افراد بھی شامل ہیں اور اگر اس بات کی توثیق ہوجاتی ہے تو بین الاقوامی برادری کوفوری طور پر نوٹس لینےکی ضرورت ہے۔

انہوں نے کہا کہ  روس کو اس مہلک کیمیائی حملے کا ذمہ دار سمجھنا چاہیئے جو شامی حکومت کی حمایت میں لڑ رہا ہے۔

دوسری جانب شامی حکومت نے کیمیائی حملے کے الزام کی تردید کرتے ہوئے  خبروں کو من گھڑت قرار دے دیا۔ اس سے قبل بھی شامی حکومت  کیمیائی حملے کے الزامات کی تردید کرچکی ہے۔

loading...
loading...