سینیٹ الیکشن، لیگی ارکان کو نامعلوم کالزکا انکشاف

File Photo

File Photo

اسلام آباد: حکمران جماعت مسلم لیگ ن کو نامعلوم نمبرز سے آنیوالی کالز کا انکشاف ہوا ہے۔ حکمران جماعت مسلم لیگ نون نے کل اسلام آباد میں سینیٹ الیکشن کیلئے اپنی پارلیمانی حکمت عملی بنالی ، وزیراعظم نے ارکان کو نامعلوم نمبر والی فون کالز کی شکایت کا معاملہ اٹھایا تو بعض ارکان نے اس دعوی سے اختلاف کرتے ہوئے اسے اداروں کو بدنام کرنے اور ٹکراؤ لانےکی کوشش قرار دیا۔

ن لیگ کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس ہوا۔ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے اجلاس میں انکشاف کیا کہ بعض لیگی اراکین کو نامعلوم نمبرز سے کالز آرہی ہیں، مقصد دباؤ ڈالنا ہے۔

اجلاس میں ان کا مزید کہنا تھا کہ معاملہ اعلیٰ اتھارٹی کے سامنے رکھ دیا ہے،اگر اب کوئی فون آئے تو فوری اطلاع دیں۔لیکن وزیراعظم کے دعوے کو اجلاس میں شریک رمیش کمار نے مسترد کردیا اور کہا ایسی باتیں کرنے والے اداروں میں ٹکراؤ چاہتے ہیں۔

میاں عبدالمنان نے بھی رمیش کمار کی حمایت کی اور بولے وزیراعظم کو یہ بھی بتایا گیاکہ جو ارکان ایسی فون کالز کا دعوی کرتے ہیں ان کے ریاستی اداروں کے ساتھ ذاتی مراسم بھی ہونگے۔آج کے اجلاس میں سابق وزیرداخلہ چوہدری نثار موجود نہیں تھے۔
البتہ اسلام آباد سے سینیٹ نشستوں کے امیدوار مشاہد حسین اور اسد جونیجو اجلاس میں شریک ہوئے۔

loading...
loading...