سپریم کورٹ کا بنی گالا میں غیر قانونی تعمیرات کو ریگولرائز کرنے کا حکم

فائل فوٹو

فائل فوٹو

اسلام آباد:چیف جسٹس سپریم کورٹ جسٹس ثاقب نثار نے بنی گالا میں غیر قانونی تعمیرات کو ریگولرائز کرنے کا حکم دے دیا۔

چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے بنی گالاغیرقانونی تعمیرات سے متعلق کیس کی سماعت کی۔

سماعت میں ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے عمران خان کی رہائش گاہ کے جعلی نقشوں کا معاملہ اٹھایاتو چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ آپ اتنے فکرمند کیوں ہورہے ہیں؟ اس معاملے کو نہیں چھوڑیں گے۔

چیف جسٹس نے کہا کہ بابر اعوان صاحب، عمران خان کی دستاویزات درست نہ ہونے کا شورمچا ہوا ہے۔

جس پر بابر اعوان نے عدالت سے دستاویزات کا جائزہ لینے کی درخواست کرتے ہوئےدستاویزات کے جعلی نہ ہونے پر دلائل دیے۔

چیف جسٹس نے تعمیرات کو ریگولرائز کرنے کا حکم سنایاتو وزیر مملکت طارق فضل چوہدری نے عدالت کو بتایا کہ انہیں استثنا دےکر ریگولر کردیا جائے۔
جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ استثنا نہیں بلکہ جرمانہ یا فیس وصول کریں۔

عدالت نے 13 مارچ تک سماعت ملتوی کرتے ہوئے سی ڈی اے سے پیشرفت رپورٹ طلب کرلی۔

loading...
loading...