سابق وزیراعظم نوازشریف نے طنزیہ انداز اپنا لیا

فائل فوٹو

فائل فوٹو

اسلام آباد:سابق وزیراعظم نوازشریف نے طنزیہ انداز اپنا لیا، پنجاب ہاوس میں عدالتی کارروائی کو مسکراتے ہوئے نشانہ بنادیا۔

اسلام آباد کی احتساب عدالت میں پیشی کے بعد جیسے ہی نوازشریف باہر نکلےصحافیوں نے میاں صاحب کو دیکھتے ہی سوالات کی بوچھاڑ کرڈالی۔

تاہم نوازشریف نے تمام سوالوں کے جواب ایک فقرے میں دےدیا۔

نواز شریف کا کہنا تھا کہ عمران خان اور جہانگیر ترین کیس میں مجھے ہی نااہل کیا جائے گا۔

سابق وزیر اعظم پنجاب ہاؤس پہنچے تو وہاں بھی طنز کے خوب تیر چلائے۔

انہوں نے کارکنوں کو بتایا 2018 کا وعدہ کرکے 2017میں لوڈ شیڈنگ ختم کرکے وعدہ خلافی کردی اسی لیے میں صادق اور امین نہیں رہا۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ اگر کرپشن یا سرکاری خزانے میں خورد برد پر فیصلہ آتا تو سر شرم سے نہ اٹھاتا لیکن میرے خلاف اقاما پر فیصلہ دیا گیا۔

loading...
loading...