بھارتی فائرنگ سے ایک ٹانگ کھودینے والی بچی دوبارہ چلنے لگ گئی

آئی ایس پی آر

آئی ایس پی آر

کشمیر کی کنٹرول لائن پر بھارتی جارحیت کا شکار بارہ سالہ بچی نے عزم اور حوصلہ کی نئی داستان رقم کردی ۔ بھارتی فائرنگ سے ایک ٹانگ کھودینے والی یاسرہ ، پاک فوج کی تعاون سے دوبارہ چلنے پھرنے اور سکھی سہیلیوں کے ساتھ کھیلنے کے قابل ہوگئی۔

 یکم اکتوبر 2017ء کو بھارتی فوج نے کنٹرول لائن پر بلا اشتعال فائرنگ کرکے بٹل سیکٹر کی سویلین آبادی کو نشانہ بنایا تھا۔

اس میں دیگر سویلین افراد کے ساتھ 12 سالہ یاسرہ ریاست بھی نشانہ بنی اور اس کی ایک ٹانگ چھلنی ہوگئی۔

 پاک فوج نے زخمیوں کو فوری طبی امداد کیلئے سی ایم ایچ داخل کرایا  بعد میں آرمی چیف جنرل قمرباجوہ نے یاسرہ کی حالت کا نوٹس لے کر اس کے بہترین علاج اور جلد بحالی کا حکم دیا ۔

 بارہ سالہ بچی کو بہترین علاج کی سہولیات دینے کے ساتھ اسے مصنوعی ٹانگ لگا کر بحالی کی جانب گامزن کیا گیا۔

دو مہینوں سے زائد وقت کے علاج کے بعد اب یاسرہ اب گھر پہنچ چکی ہے اور آرمی چیف اور پاک فوج کیلئے شکر گزار ہے ۔

loading...
loading...