انسانی اسمگلنگ  کا ناسور ختم کرناہے: چیف جسٹس پاکستان

فائل فوٹو

فائل فوٹو

اسلام آباد:سپریم کورٹ میں انسانی اسمگلنگ ازخود نوٹس کیس کی سماعت  کے دوران چیف جسٹس میاں ثاقب نثارنے کہا ہے کہ پالیسی بنانا حکومت کا کام ہے،انسانی اسمگلنگ  کا ناسور ختم کرناہے۔

چیف جسٹس نے کہا تربت میں لوگوں کو مار دیا گیا۔لیبیا میں بھی پاکستانیوں کے ساتھ ایسا واقعہ پیش آیا۔

ان کا کہنا تھا کہ لوگ کہاں کہاں سے پیسہ لے کربچوں کوبھیجتے ہیں۔بتایا جائےاس ناسور کو کس طرح ختم کیا جاسکتا ہے۔

انسانی اسمگلنگ سے متعلق اس کیس کی سماعت اب 12 فروری کو پھر ہوگئی۔

loading...
loading...