اسٹیٹ بینک نے درآمدی ڈالر سے متعلق حد میں کمی کی شرط واپس لے لی

فائل فوٹو

فائل فوٹو

کراچی:اسٹیٹ بینک اورایکس چینج کمپنیز کے درمیان ڈالر کی قیمت میں مصنوعی اضافے کو کنٹرول کرنے پر اتفاق ہوگیا۔ اسٹیٹ بینک نے درآمدی ڈالر سے متعلق حد میں کمی کی شرط واپس لے لی۔

ایکسچینج کمپنیز ایسوسی ایشن آف پاکستان کے وفداور ڈپٹی گورنر اسٹیٹ بینک کے درمیان ہونے والی ملاقات میں یہ فیصلہ کیاگیا۔

جس کے بعد اسٹیٹ بینک نے فارن کرنسیز کی برآمد کے عوض 100 فیصدکیش ڈالر درآمد کرنے کی سابقہ پالیسی بحال کردی اور بینکوں کے ذریعے65 فیصد تک کیش ڈالر درآمد کرنے کی شرط ختم کردی ۔

اسٹیٹ بینک نے نقد ڈالر کی درآمد سے متعلق نیا سرکلر تاحکم ثانی کے ساتھ جاری کردیاہے۔

 ای کیپ کے صدر ملک بوستان نے کہا ہے کہ عوام مہنگا ڈالر نہ خریدیں۔ اسٹیٹ بینک کے بروقت فیصلے سے جلد ڈالر 111 روپے پر آجائے گا۔

 واضح رہے بینکوں کے ذریعے65 فیصد نقد ڈالر درآمد کرنے کی پابندی کے بعد اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت 113 روپے سے تجاوز کرگئی تھی۔