اربوں کھربوں کےمعاملےمیں سیاسی بنیادوں پرتقرری کردی جاتی ہے: چیف جسٹس

فائل فوٹو

چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار-فائل فوٹو

اسلام آباد:کٹاس راج مندر کیس میں چیف جسٹس میاں سابق نثارسابق چیئرمین صدیق الفاروق پر برس پڑے۔

سپریم کورٹ میں کٹاس راج مندر کیس کی سماعت ہوئی۔

سماعت کے دوران چیف جسٹس نے ریمارکس دیےکہ صدیق الفاروق ساری زندگی مسلم لیگ ن کےدفتر میں بیٹھےرہے، وہاں اخباریں چھانٹتےرہےاورآج بھی اُنہی کےنمائندےبن کر عدالت کےخلاف بول رہے ہیں،رُک جائیں ورنہ براہ راست توہین عدالت لگ جائے گی۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نےیہ بھی کہا کہ کیا ان کی تقرری سیاسی اقرباپروری نہیں ہے؟اربوں کھربوں کے معاملے میں سیاسی بنیادوں پر تقرری کر دی جاتی ہے۔چیئرمین کسی عقلمند کولگائیں کسی اقلیت کو لگائیں۔

loading...
loading...