!!!کیا آپ کو بھی کوئی بطخ مسلسل دیکھ رہی ہے؟ عجیب خوف

Untitled-1

دنیا  میں کئی لوگوں کو عجیب و غریب خوف کا شکار پایا گیا ہے۔ جس میں سے ایک بطخوں کا خوف (Anatidaephobia) ہے۔ اس خوف کا شکار شخص سمجھتا ہے کہ اس دنیا میں کہیں ایک بطخ یا بگلہ اسے دیکھ رہا ہے۔

اس کوف میں مبتلا شخص سمجھتا ہے کہ بطخ اسے حملہ کرنے یا چھونے کیلئے نہیں دیکھتی بلکہ اس پر نظر رکھے ہوئے ہے۔ Anatidaephobia  یونانی لفظ  Anatidae اور Phobos سے مل کر بنا ہے۔ Anatidae کا مطلب بطخ، بگلہ اور دوسرے آبی پرندے جبکہ Phobos کا مطلب خوف ہے۔

اس میں مبتلا خوفزدہ شخص دنیا میں کہیں بھی ہو یا کوئی بھی کام کررہا ہو، اسے لگتا ہے کہ کوئی بطخ یا بگلہ اسے دیکھ رہا ہے۔ یہ خوف بطخوں یا بگلوں کے حوالے سے کسی ناخوشگوار واقعے کی وجہ سے ہو سکتا ہے۔ بطخ اور اس طرح کے پرندے کافی جارح مزاج ہوتے ہیں اور بغیر وجہ انسانوں پر حملہ کرتے ہیں۔ کوئی بچہ براہ راست یا بالواسطہ اس طرح کے تجربے سے گزر سکتا ہے۔

بہت سے کیسز میں وقت کے ساتھ ساتھ یہ خوف ختم ہوجاتا ہے لیکن کچھ کیسز میں یہ بلوغت تک ساتھ رہتا ہے۔ اس خوف سے متاثرہ شخص کی روز مرہ کی زندگی بھی کافی متاثر ہو سکتی ہے، وہ گھر سے باہر نکلنے سے انکار کر سکتا ہے۔

بہت سے کیسز میں خوفزدہ شخص خود ہی سمجھتے ہیں کہ اُن کا خوف غیر منطقی ہے، لیکن اس کے باوجود وہ اس سے جان نہیں چھڑا پاتے۔ بہت سے لوگ ڈاکٹروں کےپاس جانے سے انکار کر دیتے ہیں۔ ایسے لوگوں میں یہ خوف سالوں رہ سکتا ہے۔

اس بیماری کی صورت میں ڈاکٹر سے رجوع کرنے سے جلد علاج ممکن ہو جاتا ہے۔ ایسی بہت سی تھراپیز ہیں، جو اس خوف کے علاج میں معاون ہیں۔

loading...
loading...