چند باتیں جو شادی سے پہلے لڑکے لڑکیوں کو کوئی نہیں بتاتا

Untitled-1

کراچی: کچھ ایسی باتیں ہوتی ہیں جو دولہا دلہن کو شادی سے پہلے کوئی نہیں بتاتا۔

ویب سائٹ femina.in نے اپنی ایک رپورٹ میں ایسی ہی چند باتیں درج کی ہیں جنہیں آپ کیلئے جاننا بھی ضروری ہے۔

میاں بیوی کی پہچان کسی ایک کی بیماری کی صورت میں ہوتی ہے۔ چنانچہ کسی ایک کو معدے کی خرابی کی وجہ سے الٹیاں لگ جائیں، وہ درد کے مارے چیخ و پکار کررہا ہو یا خوفناک کھانسی نے اسے بے حال کر رکھا ہو، یہ سب کچھ دوسرے شریک حیات کو بھی ساتھ ہی بھگتنا پڑتا ہے۔

آپ خواہ ایک دوسرے سے جتنی محبت کرتے ہوں ، لیکن شادی کے بعد زندگی میں کچھ لمحات بار بار ایسے آتے ہیں جب آپ تنہائی کی خواہش کرتے ہیں اور چاہتے ہیں کہ آپ کا شریک حیات اس وقت آپ کی تنہائی میں مخل نہ ہو۔

شادی کے بعد میاں بیوی کے ازدواجی تعلق کے لمحات اپنی جگہ لیکن شادی کے بعد آپ کو بستر پر اکیلے سونا بہت یاد آئے گا، جہاں آپ اپنی مرضی کے مطابق ٹانگیں پسار سکتے تھے کلاک کی سوئی کی طرح نیند میں بستر پر گھوم سکتے تھے۔ شادی کے بعد آپ یہ سب نہیں کر پائیں گے۔

جب آپ ایک دوسرے کے ساتھ رہنا شروع کرتے ہیں تو روزانہ ایک دوسرے کے متعلق کچھ نیا دریافت ہوتا ہے۔ ان میں سے کچھ آپ کے ہونٹوں پر مسکراہٹ لائے گا اور کچھ آپ کو بہت ناگوار گزرے گا۔

اکٹھے رہتے ہوئے ایسے لمحات بھی آئیں گے جب آپ سنجیدہ بیٹھے ہوں گے اور آپ کا شریک حیات بے وجہ آپ کو تنگ کرکے لطف اندوز ہو رہا ہو گا۔

شادی کے بعدآپ کے درمیان ازدواجی تعلق کم ہوتا چلا جائے گا اور ایسا وقت آئے گا کہ آپ ازدواجی تعلق سے زیادہ اکٹھے بیٹھ کر ٹی وی دیکھنے سے زیادہ لطف اندوز ہونے لگیں گے۔

بسا اوقات ایسا بھی ہوتا ہے کہ شادی کے بعد آپ اپنے شریک حیات کو تبدیل کرنے میں ناکام ہو جاتے ہیں۔ ایسی صورت میں آپ کو خود کو بدلنا پڑتا ہے۔

شادی کے بعد آپ محسوس کریں گے کہ شادی ایک دو رویہ ٹریفک والی گلی ہے۔ اس میں دونوں میاں بیوی کو برابر وقت دینا پڑتا ہے، کوشش کرنی پڑتی ہے اور متعدد معاملات پرسمجھوتہ کرنا پڑتا ہے۔

شادی کے بعد میاں بیوی کی کچھ لڑائیاں محض چند منٹ کے لیے ہوتی ہیں لیکن کچھ آپ کو پاگل کردینے والی ہوتی ہیں۔

مذکورہ بالا تمام باتیں ہر میاں بیوی کو شادی کے بعد درپیش ہوتی ہیں اور اگر دونوں ان پر سمجھوتہ کرلیں اور قابو پالیں تو ان کی ازدواجی زندگی کو خوشگواریت کی ضمانت مل جاتی ہے۔

loading...
loading...