تیزابیت اور سینے کی جلن کا آسان اور مؤثر حل

heartburnتیزابیت اور سینے کی جلن ایک بہت عام کیفیت ہے۔ یہ کیفیت کھانے پینے کے اطوار اور اوقات میں تبدیلی یا عدم توازن کی بنا پر محسوس ہوتی ہے۔ پیٹ میں شدید درد، جلن، سوجن اور ہچکیاں اس کیفیت کی عام علامات ہیں۔ البتہ پیٹ میں درد کی اس کیفیت میں ہمیشہ وہ حل نکالا جاتا ہے جو فوری طور پر تو آرام پہنچا سکتا ہے۔ لیکن اس کا اثر جلد ہی ختم ہوجاتا ہے۔

آج ہم آپ کو کچھ ایسی چیزیں بتائیں گے جن کے استعمال سے تیزابیت اور سینے کی جلن میں دیر پا آرام حاصل کیا جاسکتا ہے۔

کیلے

کیلا پیٹ کی صحت اور نظام ہضم کے لئے انتہائی فائدہ مند ہوتا ہے۔ اس میں موجود فائبر ہاضمہ کے عمل کو بہتر بناتا ہے۔ اس کے علاوہ پوٹاشیئم پیٹ میں غیر ضروری ایسڈ کی پیداوار کو کم کرتا ہے اور اس ایسڈ سے پہنچنے والے نقصان کو بھی زائل کرتا ہے۔

Related image

دودھ کی لسی یا چھاج

دودھ میں موجود کیلشیئم کی وافر مقدار پیٹ میں پی ایچ کا تناسب بحال کر کے تیزابیت ختم کرتا ہے اور ہاضمہ درست کرتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ ٹھنڈا دودھ یا لسی تیزابیت اور جلن سے فوری نجات دلاتا ہے۔ اس کے علاوہ پیٹ کے تیزابی اجزاء کو جذب بھی کرتا ہے۔ کھانے کے بعد چھاج یا ٹھنڈی لسی پینے سے پیٹ کی تیزابیت اور جلن کم ہوجاتی ہے۔

Related image

سونف

سونف نظام ہضم کو بہتر بنانے کے لئے بہترین انتخاب ہے۔ یہ پیٹ کی دیواروں میں جلن ختم کر کے ٹھنڈک بخشتی ہے۔ اس میں پیٹ کے السر سے لڑنے کی طاقت بھی موجود ہے۔ حاملہ عورتوں کو ہاضمے میں پیش آنے والی مشکلات کے لئے بھی سونف مفید ثابت ہوتی ہے۔ کھانے کے بعد سونف کے دانے چبانے سے تیزابیت اور سینے میں جلن کے امکانات ختم کئے جاسکتے ہیں۔

Related image

لہسن

پیٹ کی تیزابیت ختم کرنے کے لئے لہسن کا استعمال بھی کیا جاتا ہے۔ کچا لہسن پیٹ کی بیماریاں پیدا کرنے والے جراژیم کو جڑ سے ختم کر دیتا ہے۔ یہی جراثیم پیٹ میں تیزابیت اور السر کا سبب بنتے ہیں۔ روز مرہ میں لہسن کا استعمال پیٹ کی صحت اور نظام ہضم کو بہتر بناتا ہے اور تیزابیت ہونے سے روکتا ہے۔ البتہ کسی بھی چیز کی ذیادتی کی طرح لہسن کی ذیادتی بھی سینے میں جلن پیدا کرسکتی ہے۔ ایسا بہت کم ہوتا ہے، لہٰذا ایک سے دو جوے مزید کھا لینے سے جلن کا یہ اثر الٹا کیا جاسکتا ہے۔

Thanks to MissKyra

loading...
loading...