کلونجی میں موت کے سوا ہر بیماری کا علاج

File Photo

File Photo

حضور اکرم صلیٰ علیہ والہ وسلم کا ارشاد ہے کلونجی کھاو اس میں موت کے سوا ہر بیماری کا علاج ہے۔ کلونجی کا پودا سونف سے مشابہ ہوتا ہے اور اسکی بلندی تقریبا سوافٹ کے قریب ہوتی ہے۔ کلونجی کی باقاعدہ کاشت ہوتی ہے۔ اسکا بیج سیاہ مائل اور اسکے پودے کا رنگ زردی مائل ہوتا ہے۔

عام طور پر کلونجی کو کھانے میں بھی ذائقہ بہتربنانے کیلئے استعمال کیا جاتا ہے۔ تاہم اسکے دیگر بہت سے فوائد بھی ہیں جو کہ ذیل میں بیان کیے گئے ہیں۔

کلونجی کے فوائد

کلونجی سردرد اور زکام میں بھی کافی مفید ہے اور اسکو اگر نیم گرم پانی میں گرم کرکے سرپر لگایا جائے تو یہ سردرد اور زکام کو رفع کرنے میں بھی معاون ہوتی ہے۔

اگر کوئی شخص بدن پر خشکی کے مسئلے کا بھی شکار ہے تو کلونجی کھانے سے یہ ختم ہوجاتی ہے۔

دانت کے درد میں بھی کلونجی کافی مفید ہے اور پانی میں پسی ہوئی کلونجی کے اگر غرارے کیے جائیے تو دانت کا درد بھی رفع ہوجاتا ہے۔

خارش کے مسئلے میں بھی یہ معاون ہے ۔ اور کلونجی کا تیل جسم کے حصے پر خارش کے مقام پر لگایا جائے تو یہ ختم ہوجاتی ہے۔

سانس کی نالی میں بلغم کیخلاف بھی یہ کافی مقوی ہے اور کلونجی کے تیل کو دودھ کے ساتھ استعمال کرنے سے بھی سانس کی نالی میں بلغم ختم ہوجاتا ہے۔

اگر کسی شخص کو کھانا کھانے کے بعد بھاری پن محسوس ہوتا ہے تو کلونجی کا سفوف کافی سودمند ہے اور اس کے کھانے سے معدے کی اصلاح ہوجاتی ہے۔

مثانے کی پتھری میں بھی کلونجی کافی فائدے مند ہے۔ اور اسکا جوشاندہ شہد میں ملا کر کھانے سے یہ پتھری خارج ہوجاتی ہے۔

چہرے پر نکھار لانے کیلئے کلونجی سودمند ہے اور اسکا لیپ گھی میں ملا کر اگر چہرے کی جلد پر لگایا جائے تو اس سے چہرہ نکھر جاتا ہے۔

چھینکوں کی شکایت بھی کلونجی دور کرسکتی ہے اسکو پیس کر روغن زیتون میں اسکے قطرے ناک میں ٹپکانے سے چھینکوں کی شکایت ختم ہوجاتی ہے۔