کئی دہشت گرد حملوں کی منصوبہ بندی افغانستان میں ہوئی،دفترخارجہ

فائل فوٹو

فائل فوٹو

اسلام آباد: ترجمان دفترخارجہ نفیس زکریا  نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ اے پی ایس سمیت کئی دہشت گرد حملوں کی منصوبہ بندی افغانستان میں ہوئی۔

جمعرا ت کو ترجمان دفترخارجہ نے ہفتہ وار پریس بریفنگ میں بھارت کی جانب سے ایل او سی کی خلاف ورزی پر کہا کہ بھارت ایل او سی پر  جان بوجھ کر دیہات اور عام شہریوں کو نشانہ بنا رہا ہے جس پر پاکستان بار ہا بھارت سے اپنا احتجاج ریکارڈ کرا چکا ہے ۔

بھارت کی جانب سے اسلحے کے انبار لگانا خطے میں ہتھیاروں کی دوڑ کوفروغ دے گا،کل بھوشن یادیو نے بھی اپنے بیان میں سی پیک کو سبوتاژ کرنےکی کوشش کا اعتراف کیا تھا۔

ترجمان دفترخارجہ کا کہنا تھا کہ ماسکو میں بدھ کے روز6فریقی مزاکرات میں افغانستان میں علاقائی سلامتی پر بات چیت کی گئی، 6ملکی میکانزم میں اب وسطی ایشیائی ریاستوں کو بھی شامل کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔

 نفیس زکریا کا کہنا تھا کہ اے پی ایس سمیت کئی دہشت گردانہ حملوں کی منصوبہ بندی افغانستان میں کی گئی،دہشت گرد تنظیم جماعت الاحرار صرف افغانستان میں موجود ہے ۔

ترجمان نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے افغان حکومت سے جماعت الحرار سمیت اپنی سر زمین پر موجود تمام دہشت گرد عناصرکیخلاف کارروائی کا مطالبہ بھی کیا۔

ترجمان دفتر خارجہ نفیس زکریا کی ہفتہ وار پریس بریفنگ میں لاہور کوئٹہ اور پشاور میں دہشت گردی کے واقعات اورایل اوسی پر بھارتی فوج کی فائرنگ کی بھی مذمت کی گئی اس فائرنگ کے نتیجے میں تین جوانوں نے جام شہادت نوش کیا۔

 ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ دہشت گردی کیخلاف جنگ میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کی قربانیوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں۔

loading...
loading...