شمالی کوریا فوجی کمانڈوں کوجوہری ہتھیارتیاررکھنےکی ہدایت

noarth-koria

سیئول:شمالی کوریا کے صدر کم جانگ ان نے فوجی کمانڈوں کو جوہری ہتھیار تیار رکھنے کی ہدایت دے دی۔ جنوبی کوریا اور آسٹریلیا نے کم جانگ ان کے بیان کی شدید مذمت کی ہے۔ امریکا نے بھی شمالی کوریا کو باز رہنے کا کہہ دیا ہے۔

سرکاری ذارئع کے مطابق شمالی کوریا کے صدر کم جانگ ان نے جوہری ہتھیاروں کے استعمال کی تیاری فوجی مشقوں کے دوران دی، ان کا موقف تھا کہ اپنی خود مختاری اور اور جینے کے حق کے دفاع کیلئے اپنے پاس جوہری طاقت کو بڑھانا ہی واحد راستہ ہے۔ صدر کم جانگ ان متعدد راکٹ تجربات کی خود نگرانی کر رہے ہیں۔

جنوبی کوریا کی وزارت یونیفکیشن نے شمالی کوریا کے صدر کم جانگ ان کے بیان پر تنقید کردی۔شمالی کوریا کا یہ عمل دونوں ممالک کے تعلقات کو بہتر نہیں بنائے گا۔ ہماری حکومت شمالی کوریا کی جانب سے کسی بھی اشتعال انگیز عمل کے جواب کیلئے تیار ہے۔

آسٹریلیا کے وزیر دفاع نے کہتے ہیں کہ انہوں نے شمالی کوریا کو بین الاقوامی قوانین کیخلاف ورزی نہ کرنے پر آمادگی کی کوشش کی ہے جبکہ جاپانی وزیر خارجہ نے دوٹوک الفاظ میں واضح کیا ہے کہ شمالی کوریا کے نیوکلیئر پروگروام کو کسی صورت قبول نہیں کرسکتے۔

شمالی کوریا کے صدر کم جانگ تبصروں پر کیا کہہ سکتے ہیں۔ شمالی کوریا کی جوہری میزائل ترقی ناقابل قبول ہے۔ہم نے عالمی برادری سے رابطہ کریں گے اور شمالی کوریا کے نیوکلیئر پروگرام کو روکنے کیلئے منظور کی گئی قرارداد پر تعاون کریں گے۔

پینٹاگون کے ترجمان کمانڈر بل اربن نے شمالی کوریا سے ایسے اشتعال انگیز بیان سے باز رہنے کا مطالبہ کردیا۔ امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان جان کربی نے گزشتہ روز شمالی کوریا کی جانب میزائل فائر کی تاحال تصدیق یا تردید نہیں کی ہے۔

loading...
loading...