پنجاب اسمبلی نے مالی سال 20-2019 کا بجٹ منظورکرلیا

فائل فوٹو

فائل فوٹو

 پنجاب اسمبلی نے کسی شور شرابے کے بغیر آئندہ مالی سال 20-2019 کےلئے 23 کھرب 60 ارب روپے سے زائد مالیت کا بجٹ منظور کر لیا۔اپوزیشن کی طرف سے پیش کردہ کٹوتی کی تمام تحریکیں مسترد کر دی گئیں۔

پنجاب اسمبلی سے منظور کردہ آئندہ مالی سال کے بجٹ میں جاری اخراجات پر 1298ارب 80 کروڑ خرچ کرنے کی منظوری دی گئی ہے۔ پنجاب میں ٹیکس اورنان ٹیکس آمدنی سے388 ارب 40 کروڑ روپے ملنے کا تخمینہ لگایاگیاہے۔ اپوزیشن لیڈرحمزہ شہبازنےبجٹ کی منظوری میں حکومت کو فری ہینڈ دیا۔ اپوزیشن اراکین کا کہنا ہے کہ عددی اکثریت حکومت کے پاس تھی، بجٹ تو پاس ہونا ہی تھا۔

حزب اقتدار کے اراکین کا کہنا تھا کہ بجٹ کو عوام دشمن کہنے والوں کو حقیقت سمجھ میں آ گئی ہے۔ بجٹ پر تنقید صرف احتساب سے بچنے کےلئے کی جا رہی تھی۔

اپوزیشن کی طرف سے خدشہ ظاہر کیا گیا ہے کہ سالانہ میزانیہ کی منظوری کے باوجود سال میں کئی منی بجٹ آئیں گے۔ گیس بجلی اور پٹرول کی قیمتیں بڑھا کر عوام پر مہنگائی کا مزید بوجھ ڈالا جائے گا۔

loading...
loading...