خیبرپختونخوا کابینہ کی 900 ارب روپے کے بجٹ کی منظوری

فائل فوٹو

فائل فوٹو

پشاو:خیبرپختونخوا کابینہ نے 900 ارب روپے کے بجٹ کی منظوری دے دی،سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پینشن میں10فیصد اضافے کی منظوری دی گئی  ۔

خیبر پختونخوا کابینہ کا اجلاس وزیر اعلی محمود خان کی صدارت میں منعقد ہوا ،جس میں کابینہ نے مالی سال 20-2019 کےبجٹ کی منظوری دے دی،اجلاس میں 900 ارب روپے کے بجٹ کی منظوری دی گئی۔

ترقیاتی کاموں  کیلئے 319ارب کا بجٹ مختص ہے ،بجٹ میں کوئی نیا ٹیکس نہیں لگایا گیاجبکہ 19-2018کے مقابلے میں 41فیصدزیادہ ہے ،تعلیم کے 163 ہیلتھ کیلئے 98بلین  مختص کیا گیا۔

اس کے علاوہ بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہواں اورپینشن میں  10 فیصد کے اضافے کی تجویز دی گئی جبکہ مزدور کی اجرت کم سے کم 17ہزار کرنے کی منظوری بھی دی گئی۔

وزیر اعلیٰ محمود خان نے   موجودہ بجٹ کو بہترین اور  متوازن بجٹ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہم ایک مشکل دور سے گزر رہے ہیں ہیں لیکن اس کے باوجود  کوشش کی گئی ہے کہ کمزور طبقے پر بوجھ کم ڈالا جائے ۔

انہوں نے کہا کہ پہلی مرتبہ فاٹا کے اضلاع کا بجٹ تیار کیا گیا ہے جو پچھلے سالوں کے مقابلے میں 3گناہ زیادہ ہےجبکہ صوبے  کے پسماندہ دہ اضلاع کو زیادہ اہمیت دی گئی ہےاور اس بار پبلک سیکٹر میں 41 ہزار سے زیادہ  ملازمتیں دی جائیں گی۔

loading...
loading...