شہنشاہ غزل استاد مہدی حسن خان کو بچھڑے آج 7برس بیت گئے

فائل فوٹو

فائل فوٹو

لاہور:اپنی سحر انگیز آواز سے برِ صغیر پاک و ہند پر کئی دہائیوں تک راج کرنے والے شہنشاہ غزل استاد مہدی حسن خان کو ہم سے بچھڑے آج 7برس بیت گئے۔

  انیس سو ستائیس کو بھارتی ریاست گجرات کے ایک موسیقار گھرانے میں پیدا ہونے والے استاد مہدی حسن خان نے غزل گائیکی کی تربیت اپنے گھر سے حاصل کی۔

انیس سو ستاون کوریڈیو پاکستان سے انہیں اپنی فنکارانہ صلاحیتیں دیکھانے کا موقع ملا  اور پھر ساٹھ اور ستر کی دہائی میں ان کی گائیکی ہر گلی کوچے میں گونجنے لگی اور وہ پاکستان کے معروف ترین گائیک بن گئے۔

  انہوں نے اپنی فنی زندگی میں پجیس ہزار سے زائد گیت اور غزلیں گائیں،ان کی فنی خدمات کے بائث حکومت کی جانب سے انہیں  تمغہ امتیاز، ستارہ امتیاز اور پرائیڈ آف پرفارمنس جیسے اعزازات سے بھی نوازا گیا۔

 مہدی حسن طویل علالت کے بعد 13جون 2012 کو اس زارِ فانی سے کوچ کر گئے تاہم ان کے گیت ہمیشہ ان کی یاد دیلاتے رہیں گے۔

loading...
loading...