وفاق کابینہ میں کتنے وزیر اور مشیر شامل ۔ ۔ ۔ رپورٹ

khannimage

گزشتہ عام انتخابات میں تحریک انصاف حکومت بنانے میں کامیاب ہوئی تو وزیراعظم عمران خان کے ہمراہ حلف اٹھانے والی وفاقی کابینہ  21 ارکان پر مشتمل تھی۔ جن میں 16 وفاقی وزیر اور 5 وزیراعظم کے مشیر مقرر کیے گیے تھے۔

دس ماہ کے دوران وزیراعظم کی کابینہ میں وفاقی وزراء کی تعداد 24، وزرائے مملکت کی تعداد 5 ،مشیروں کی تعداد بھی 5 جبکہ وزیراعظم معاونین خصوصی کی تعداد 14 تک پہنچ گئی جن کا درجہ وفاقی وزیر یا وزیر مملکت کے برابر ہے۔

 وزیراعظم نے گذشتہ روز ڈاکٹر ثانیہ نشتر کو اپنی معاون خصوصی مقرر کیا تو ان کے معاونین خصوصی کی تعداد 13 سے بڑھ کر 14 اور وفاقی کابینہ میں غیر منتخب افراد کی تعداد 17 سے بڑھ کر 18 ہو گئی۔

دس ماہ کے دوران جہاں کابینہ کی توسیع کی تو وہیں کچھ کے محکمے بھی تبدیل کر دیے جن میں وزیر اطلاعات فواد چوہدری، شہریار افریدی، اعظم سواتی ، طارق بشیر چیمہ، شامل ہیں جبکہ وزیراعظم نے ادویات کی قیمتوں میں اضافے کا ذمہ دار وفاقی وزیر صحت عامرکیانی کو ٹھہراتے ہوئے انہیں وزارت سے ہٹا دیا ۔

اس دوران وزیر خزانہ اسد عمر نے بھی اپنی وزارت سے استعفی دیدیا جنہیں اب قومی اسمبلی کی کمیٹی خزانہ کا چیرمین مقرر کیا گیا ہے۔

وزیراعظم نے دس ماہ کے دوران حکومتی ترجمان تبدیل کرتے ہوے سابق وزیر اطلاعات فردوس عاشق اعوان کو اپنا معاون خصوصی مقرر کر دیا انہہں وزارت اطلاعات و نشریات کی ذمہ داری سونپی ہے۔

  نندی پور پاور پراجیکٹ میں وزیراعظم کے مشیر ڈاکٹر بابر اعوان نے اپنے عہدے سے استعفی دیدیا تھا ۔

وزیراعظم نے اعظم سواتی کو آئی جی تبادلہ کیس میں عہدے سے ہٹایا تاہم ایف بی آر کی طرف سے انہیں کلئیر کیے جانے پر ایک مربتہ پھر وفاقی وزیر کے عہدے پر فائز کیا۔

تاہم انہیں وزارت کا قلمدان سائنس وٹیکبالوجی سے لیکر اب پارلیمانی امور کا وفاقی وزیر مقرر کیا گیا ہے۔ وزیراعظم نے مراد سعید کو دو وزارت کی ذمہ داری سونپی ہے جن میں وزارت مواصلات اور وزارت پوسٹل سروسز شامل ہیں۔

loading...
loading...