عمران خان اور پاکستان پر اب تک کا سب سے سنگین الزام

فائل فوٹو

فائل فوٹو

نئی دہلی: دہلی کے وزیراعلیٰ اور عام آدمی پارٹی کے سربراہ اروند کیجریوال وزیراعظم پاکستان عمران خان پر اب تک کا سنگین الزام عائد کرتے ہوئے کہا ہے کہ عمران خان بھارت میں فسادات پھیلانا چاہتے ہیں یہی وجہ ہے کہ وہ لوک سبھا کے انتخابات میں نریندر مودی کی مدد کررہے ہیں۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اروند کیجریوال نے کہا کہ پاکستان اور عمران خان بھارت میں فسادات پھیلانا چاہتے ہیں، اسی لیے پاکستان، دوبارہ وزیراعظم بننے میں مودی کی مدد کررہا ہے۔

اروند کیجریوال نے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے جواب میں ٹوئٹ کیا، جس میں انہوں نے کہا کہ جو کام پاکستان 70 سال میں نہیں کرسکا وہ ان کے دوست مودی نے 5 سال میں کردیا۔

بھارتیہ جنتا پارٹی کے ٹوئٹ میں بی جے پی صدر نے کہا تھا کہ وہ ملک سے بدھوں، ہندوﺅں اور سکھوں کے علاوہ بھارت میں داخل ہونے والے ہر فرد کو نکال دیں گے۔

یہ ٹوئٹ آسام ریاست میں نیشنل رجسٹر آف سٹیزنز (این آر سی) کے متنازع عملدرآمد سے متعلق کیا تھا۔ اروند کیجریوال نے مذکورہ بیان بھارتی انتخابات سے متعلق وزیراعظم کے بیان پر دیا تھا۔

10  اپریل کو وزیراعظم پاکستان عمران خان نے غیرملکی صحافیوں کو دیے گئے انٹرویو میں کہا تھا کہ اگر بھارت میں بی جے پی کی حکومت دوبارہ آئی تو مسئلہ کشمیر سے متعلق پیش رفت کا امکان ہے۔

عمران خان نے کہا تھا کہ اگر بھارت میں اگلی حکومت کانگریس جماعت کی آئی تو وہ مسئلہ کشمیر کے حوالے سے خطرناک ہوسکتی ہے۔

بعدازاں بھارت میں انتخابات سے متعلق وزیراعظم عمران خان کے بیان پر بھارتی اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے نریندر مودی اور ان کی جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) پر سخت تنقید کی گئی۔

کانگریس، عام آدمی پارٹی ( اے اے پی)، کشمیری سیاست دانوں عمر عبداللہ اور محبوبہ مفتی کی جانب سے بھی بی جے پی کو تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔

loading...
loading...