لاپتہ ہندو لڑکیوں کا بیان سامنے آگیا

Untitled-1

ڈہرکی سے لاپتہ ہندو لڑکیوں کا بیان سامنے آگیا  جس میں دونوں لڑکیوں نے مؤقف دیا ہے کہ انہوں نے پسند کی شادی کی ہے کسی نے اغوا نہیں کیا۔

دونوں لڑکیوں نے خان پور میں نکاح کیا جبکہ تحفظ کیلئے بہالپور عدالت سے بھی رجوع کرلیا ہے۔

دوسری جانب لڑکیوں کے ورثا سراپا احتجاج ہیں انہوں نے الزام عائد کیا ہے کہ لڑکیوں کو اغوا کیا گیا ہے۔ انہیں عدالت میں پیش کیا جائے ۔

واضح رہے نواحی گاؤں حافظ سلیمان میں دو بہنیں روینا اور رینا اکیس مارچ کی شب گھر سے غائب ہوگئیں تھیں۔

لڑکیوں کے باپ نےتھانے پہنچ کر  الزام عائد کیا کہ بچیوں کو اغوا کیا گیا ہے۔

لڑکیوں کے اغوا کے خلاف ورثا نے قومی شاہراہ پر دھرنادےدیا جہاں پولیس کیخلاف نعرے بازی کی گئی۔

دوسری جانب روینا اور رینا کا مؤقف ہے کہ انہیں اپنی پسند سے شادی کی ہے اغوا نہیں کیا گیا۔

پولیس نے تقریب نکاح میں شریک ایک شخص کو گرفتار کرلیا ہے۔

loading...
loading...