افسانہ نگار بانو قدسیہ کی آج دوسری برسی منائی جارہی ہے

فائل فوٹو

فائل فوٹو

لاہور:امر بیل لکھ کر امر ہوگئیں، “ادھوری بات” میں سب کہہ دیا، راجا گدھ جیسی شاہکار تصنیف کی خالق بانو قدسیہ کی آج دوسری برسی منائی جارہی ہے۔

بانو قدسیہ اردو ادب کی اہم افسانہ نگارتھیں،ان کی کہانی نویس ،داستان گو،ناقابل ذکر ،بازگشت، امربیل، دست بستہ، سامان وجود،توجہ کی طالب، آتش زیرپا اورکچھ اور نہیں سمیت کئی تصانیف انسانی نفسیات،حالات وواقعات کی عکاسی کرتی ہیں۔

ان کا شہرہ آفاق ناول راجہ گدھ اپنے اسلوب کی وجہ سےمنفرد حیثیت رکھتا ہے،جس میں وہ حرام اور حلال کے نظریئے کونہایت انوکھے انداز میں بیان کرتی ہیں ۔

افسانہ نگاراورڈرامہ نویس اشفاق احمد سے رشتہ ازدواج میں منسلک ہونے کے بعد ان کے ہمراہ ادبی پرچہ داستان گونکالا،ٹیلی ویژن کیلئے کئی یادگار ڈرامہ سیریلز تحریر کئے،انہیں ستارہ امتیاز اورہلال امتیاز سے بھی نوازا گیا۔

چار فروری 2017 کو داستان سرائے کی یہ مکین رخصت تو گئیں لیکن انکی ادبی خدمات آج بھی تازہ ہیں۔

loading...
loading...