اداروں میں آڈٹ کا نظام ضروری ہے، وزیرخزانہ

فائل فوٹو

فائل فوٹو

لاہور:وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر کا کہنا ہے کہ اداروں میں آڈٹ کا نظام ضروری ہے، بجلی پیدا کرنے کیلئے آزادی ہونی چاہیے۔

پیر کو لاہور میں فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے اسد عمر کا کہنا تھا کہ مختلف صنعتی شعبوں کا معیشت میں اہم کردار ہے، صنعتیں چلانا سرمایہ کاروں کا کام، حکومت کا کام معاونت کرنا ہے، اداروں میں آڈٹ کا نظام ضروری ہے۔

وزیر خزانہ کا مزیدکہنا تھا کہ ٹیکس ریٹرن فائل کرنے والوں کے لیے آسانیاں پیدا کریں گے اور ان کی حوصلہ افزائی کی جائے گی، خواتین اکنامک زونز اچھا آئیڈیاہے اور اس پر کام کریں گے۔

 اسد عمر کا کہنا تھا کہ 18ویں ترمیم کے بعد زراعت کا شعبہ صوبائی معاملہ بن گیا ہے، حیران کن ہے کہ 2018میں کپاس کی فصل انیس سو بانوے سے کم ہے، ہمیں اس فصل کو بڑھانے کیلئے اہم اقدامات اٹھانے ہوں گے۔

وفاقی وزیر خزانہ ایف پی سی سی آئی پہنچے تو تاجر برادری نے ان کے سامنے شکایات کے انبار لگا دئیے،اسد عمرسے ایف بی آر کے آڈٹ نوٹسز پر نوٹس لینے اور ویمن انڈسٹریل زونز بنانے سمیت دیگر مطالبات کئے گئے۔

loading...
loading...