سپریم کورٹ نے نجی اسکول فیسوں میں 20 فیصد کمی کا حکم  دے دیا

فائل فوٹو

فائل فوٹو

اسلام آباد:سپریم کورٹ آف پاکستان نے نجی اسکول فیسوں میں 20 فیصد کمی کا حکم دے دیا ،اطلاق 5000 سے زائد والے اسکولوں پرہوگا ۔

جمعرات کو چیف جسٹس ثاقب نثار نے اپنے مدت ملازمت کے آخری دن مہنگی اسکول فیسوں سے پریشان والدین کو ریلیف دے دیا۔

 چیف جسٹس کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3رکنی بینچ نے اسکول فیسوں سے متعلق تحریری فیصلہ جاری کردیا ۔

جسٹس اعجاز الاحسن کے تحریرکردہ فیصلے میں نجی اسکولوں کی فیسوں میں 20 فیصد کا حکم جاری کیا گیا جس کا اطلاق ملک بھر کے تمام نجی اسکولوں پر ہوگا ۔

فیصلے میں کہا گیاکہ 20 فیصد کمی کا اطلاق 5000 سے زائد فیس پرہوگا 5ہزار سے کم فیس والے اسکول 20 فیصد کمی سے مستثنی ہیں ۔

فیصلے میں مزید کہا گیا کہ عدالتی فیصلے کے مطابق والدین اورطلبہ کم فیس جمع کرائیں جووالدین کم فیس جمع نہیں کرائیں گے،ان کیخلاف ڈسیپلینری ایکشن لیا جائےگا تاہم والدین فیس مقرروقت تک ادا کریں ۔

سپریم کورٹ کے فیصلے میں اسکول کو خبردار کرتے ہوئے کہا گیا کہ اسکول اساتذہ کی تنخواہوں میں کوئی کمی نہیں کی جائےگی فیسوں پرکمی سے اسکالرشپس اوراسکول کی سہولیات پرکوئی فرق نہیں پڑے گا ، ایف آئی اے اسکولوں کے قبضے میں لیا گیا ریکارڈ فوٹو کاپی کرکے واپس کرے ۔

فیصلے میں نجی اسکول کو بھی خبردار کرتے ہوئے کہا گیاکہ نجی سکولوں نے عدالتی حکم کے بارے میں والدین کوتضحیک آمیزخطوط لکھے ،جن اسکولوں نے تضحیک آمیزخطوط لکھے ان کونوٹس جاری کرتے ہیں جو وضاحت کریں کہ کیوں نہ ان کیخلاف توہین عدالت کی کاروائی کی جائے ملک میں قانون اورعدالتی احکامات کی خلاف ورزی نہیں کی جاسکتی ۔

سپریم کورٹ نے لااینڈ جسٹس کمیشن کو تعلیمی اصلاحات رپورٹ ویب سائیٹ پرنمایاں کرنے کی ہدایت بھی کی ۔

loading...
loading...