وزیرخارجہ نے آلوکی گرتی قیمت کوعالمی سطح کا بحران قرار دیدیا

فائل فوٹو

فائل فوٹو

اسلام آباد:وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے آلوکی گرتی قیمت کوعالمی سطح کا بحران قرار دے دیا ،پیپلزپارٹی رکن راجہ پرویز اشرف نے حیرانگی کا اظہارکیا۔

بدھ کو قومی اسمبلی اجلاس کے دوران وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ آلو کے کاشتکارپریشان ہیں، آلو کی قیمت گری ہے ، بھارت میں آلوایک روپے بک رہا ہے، آلو کی قیمت پر یہ بحران بین الاقوامی سطح پر آئی ہے ۔حقیقت یہ ہے کہ جتنی لاگت آرہی ہے اتنی قیمت نہیں مل رہی۔ 18ویں ترمیم کے بعد زراعت صوبوں کو منتقل ہوچکا ہے ،البتہ معاملے کے حل کیلئے مل بیٹھ کر اس کا حل نکالنا ہوگا ۔

وزیرخارجہ نے مزیدکہاکہ یہ سیاست کا مسئلہ نہیں بلکہ یہ کاشتکاروں کی فلاح کا مسئلہ ہے جسے حکومت و اپوزیشن مل کر حل کرے ، چاہتے ہیں وزیر تجارت، وزیر زراعت کے مل بیٹھ کر حل نکالیں، کسان تنظیموں کو بھی اعتماد میں لینا چاہیئے ، معاملے پر صرف تقریروں کی بجائے اپوزیشن اپنی آراء دے ۔

شاہ محمود قریشی کی تقریر کے بعد راؤاجمل کا نکتہ اعتراض پر بات کرنے پر اصرارکیا تو سپیکر نے ایجنڈے کے بعد نکتہ اعتراض دینے کا کہہ کر ایجنڈا آگے بڑھا دیا ۔

 راجہ پرویزاشرف نے کہا کہ اوکاڑہ سمیت آلوکا کاشتکارملکی تاریخ میں کبھی اتنا تنگ نہیں ہوا ، وزیرخارجہ کی بات پرحیرانگی ہے ،وہ کہتے ہیں آلوکی قیمت کا معاملہ بین الاقوامی ہے ، آلوکی قیمتوں پروزیرزراعت اوردیگرکومل کربیٹھنا چاہئے ۔

loading...
loading...